بیلجیم میں نئے سال کے موقع پر دہشت گردی کا منصوبہ ناکام بنا دیا گیا

ویب ڈیسک  منگل 29 دسمبر 2015
پولیس نے دو دہشت گردوں کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے فوجی وردیاں برآمد کرلیں، پولیس، فوٹو: فائل

پولیس نے دو دہشت گردوں کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے فوجی وردیاں برآمد کرلیں، پولیس، فوٹو: فائل

برسلز: نئے سال کے موقع پر بیلجیم کوخون میں نہلانے کا دہشت گردوں کا منصوبہ ناکام بنا دیا گیا اور پولیس نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے 2 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق بیلجیم پولیس نے خفیہ اطلاعات کے بعد دارالحکومت برسلز، صوبہ فلیمش، برا بینٹ اور لیج میں چھاپے مار کر دہشت گردی کی منصوبہ بندی کرنے والے 2 افراد کو گرفتار لیا۔ پولیس نے ملزمان کے ذاتی استعمال کے کمپیوٹر اور ان کے پاس موجود فوجی وردیاں اپنے قبضے میں لے لیں تاہم ان کے قبضے سے کسی قسم کا کوئی اسلحہ برآمد نہیں ہوا۔ پولیس کا کہنا تھا کہ گرفتاریوں کا کوئی تعلق پیرس حملوں سے نہیں تاہم گرفتار افراد میں سے ایک کے بارے میں شبہ ہے کہ وہ دہشت گردوں کا سیل چلانے کا انچارج ہے جب کہ وہ لوگوں کو داعش میں شمولیت کے لیے بھی تیار کرتا ہے۔

بیلجیم پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ گرفتار افراد پر پیرس میں طے شدہ جگہوں اور پولیس کو دہشت گردی کا نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کرنے کے الزامات لگائے گئے ہیں تاہم ان افراد کی شناخت کو فی الحال خفیہ رکھا گیا ہے۔

واضح رہے کہ رواں سال نومبر میں پیرس کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا گیا تھا جس میں 130 افراد ہلاک ہوگئے تھے جس کے بعد فرانس اور بیلجیم میں سیکورٹی انتہائی سخت کردی گئی ہے اور معمولی سے شک کی بنیاد پر بھی مسلمان شہریوں کو حراست میں لے لیا جاتا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔