کینیڈین کمپنی نے خراٹے روکنے والا تکیہ تیارکرلیا

ویب ڈیسک  منگل 5 جنوری 2016
تکیےکا نظام خراٹوں کا سگنل سنتے ہی سر کو معمولی حرکت دیتا ہے تاکہ منہ میں جانے والی ہوا کا رخ بدل کر خراٹے کم ہوجائیں، فوٹو: فائل

تکیےکا نظام خراٹوں کا سگنل سنتے ہی سر کو معمولی حرکت دیتا ہے تاکہ منہ میں جانے والی ہوا کا رخ بدل کر خراٹے کم ہوجائیں، فوٹو: فائل

ٹورانٹو: ماہرین نے ’’نورا‘‘ نامی ایک تکیہ تیار کیا ہے جو خراٹوں کو روکنے میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔

کینیڈین کمپنی کی جانب سے تیار کیے گئے اس تکیے کے اندر الیکٹرانک نظام نصب ہے جو خراٹے کی آواز سن کر تکیے کو پھیلاتا اور سکیڑتا ہے، اس طرح خراٹے لینے والے کا سر دوسری پوزیشن میں آجاتا ہے اور خراٹے کم ہوجاتے ہیں۔ تکیے کو پلنگ کے قریب رکھا جاتا ہے جو خراٹے کی آواز سن کر تکیے کے اندر پمپ کو چلاکر اٹھاتا ہے اور سونے والے کی پوزیشن بدل جاتی ہے جب کہ اس عمل سے حلق کے پٹھوں کو بھی سکون ملتا ہے اور سانس لینے میں آسانی ہوجاتی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہےکہ خراٹے لینے والے شخص کا سر نیند میں ہلایا جائے تو منہ میں ہوا جانے کی پوزیشن کچھ بدل جاتی ہے اورتھوڑی دیر میں خراٹے کم یا رک جاتے ہیں کیونکہ جب تک حلق کے اوپری حصے کے پٹھوں ( مسلز) پر دباؤ نہیں پڑتا اس وقت تک خراٹے شروع نہیں ہوتے جب کہ یہ تکیہ عین اسی وقت کام کرتا ہے جب خراٹے شروع ہونے والے ہوتے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔