6 سرکاری اسپتالوں میں پوسٹ مارٹم کی سہولت موجود نہیں

اسٹاف رپورٹر  ہفتہ 10 نومبر 2012
جناح میں ایم ایل اوز کی2اور سول میں 3اسامیاں خالی،میڈیکولیگل متاثرین کوانصاف کی فراہمی میں اہم کردار ادا کرتا ہے،فارنسک ماہرین۔ فوٹو : فائل

جناح میں ایم ایل اوز کی2اور سول میں 3اسامیاں خالی،میڈیکولیگل متاثرین کوانصاف کی فراہمی میں اہم کردار ادا کرتا ہے،فارنسک ماہرین۔ فوٹو : فائل

کراچی: کراچی کے مختلف اسپتالوں میں قائم متعددمیڈیکو لیگل شعبے غیرفعال ہیں کراچی کی ڈیڑھ کروڑ کی آبادی کیلیے صرف تین اسپتالوں میں میڈیکو لیگل کی سہولتیں فراہم کی جارہی ہیں،9 میں سے6 اسپتالوں میں قائم میڈیکولیگل شعبے مکمل غیر فعال ہیں اوران اسپتالوں میں پوسٹ مارٹم کی بھی سہولتیں میسر نہیں، بیشتراسپتالوں میں میڈیکولیگل افسران کی متعدد اسامیاں خالی پڑی ہیں۔

کراچی میں8 لیڈی میڈیکولیگل افسران تعینات ہیں، میڈیکولیگل شعبہ مختلف حادثات وواقعات میں ہونے والے زخمیوں کے زخم کا تعین کرکے میڈیکل سرٹیفکیٹس جاری کرتا ہے جس کی بنیاد پرمتعلقہ عدالتوں میں فیصلے کیے جاتے ہیں، تفصیلات کے مطابق کراچی کی ڈیڑھ کروڑ کی آبادی کیلیے 9 اسپتالوں میں سے صرف 3 اسپتالوں میں قائم میڈیکولیگل شعبے مکمل فعال ہیں ان میں جناح اسپتال، سول اسپتال اور عباسی شہید اسپتال شامل ہیں جبکہ کراچی کے 6اسپتالوں میں قائم میڈیکو لیگل شعبے مکمل غیر فعال پڑے ہیں ،ان میں لیاری جنرل اسپتال، سندھ گورنمنٹ نیوکراچی، سندھ گورنمنٹ لیاقت آباد اسپتال،سندھ گورنمنٹ سعودآباد اسپتال، سندھ گورنمنٹ قطر اسپتال،سندھ گورنمنٹ کورنگی اسپتال شامل ہیں۔

جہاں پوسٹ مارٹم کی سہولتیں ناپید ہیں، ان اسپتالوں میں سے بعض میں میڈیکولیگل افسران تعینات ہیں لیکن پوسٹ مارٹم کی سہولتیں نہ ہونے کی وجہ سے کوئی کام نہیں کیاجارہا جبکہ بعض اسپتالوںمیں تعینات ایم ایل اوز نے اپنی تعیناتی دوسرے اسپتالوں میں کرارکھی ہے اور بیشتر اسپتالوں میں متعددمیڈیکو لیگل افسران کی اسامیاں بھی خالی پڑی ہیں، ذرائع کے مطابق جناح اسپتال کے میڈیکولیگل شعبے میں5 ایم ایل اوز تعینات میں ہیں ان میں سے گریڈ 18کے دو سینئرایم ایل اوزاورایک گریڈ17کے ایم ایل اوکام کررہے ہیں،2ایم ایل اوزکی اسامیاں خالی پڑی ہیں،عباسی شہیدا سپتال میں 5ایم ایل اوز میں سے صرف3کام کررہے ہیں جبکہ 2 اسامیاں خالی پڑی ہیں، سول اسپتال میں5 ایم ایل اوز میں سے2 ایم ایل اوزکام کررہے ہیں یہاں 3 اسامیاں خالی پڑی ہیں، محکمہ صحت کی ایک رپورٹ کے مطابق کراچی میں سالانہ 3500 پوسٹ مارٹم اور35 ہزار متاثرین کومیڈیکولیگل سرٹیفکیٹس جاری کیے جاتے ہیں، ماہرین فارنسک کے مطابق میڈیکولگل شعبہ متاثرین کو متعلقہ عدالتوں میں انصاف کی فراہمی میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔