ثانوی تعلیمی بورڈ میں نویں جماعت کے نتائج کا اجرا طول پکڑ گیا

صفدر رضوی  پير 12 نومبر 2012
نتائج کے اجرا میں 8 ماہ کی تاخیر،نامکمل نتائج آئندہ 4 روز میں جاری کرنے کے لیے مختلف آپشنز پرغور شروع کردیا گیا.  فوٹو: فائل

نتائج کے اجرا میں 8 ماہ کی تاخیر،نامکمل نتائج آئندہ 4 روز میں جاری کرنے کے لیے مختلف آپشنز پرغور شروع کردیا گیا. فوٹو: فائل

کراچی: ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے تحت نویں سائنس گروپ کے نتائج کے اجرا کامعاملہ پیچیدہ ہوگیا ہے۔

نتائج کے اجرا میں 8 ماہ کی تاخیر کی بعد بورڈ انتظامیہ نے نامکمل نتائج آئندہ 4 روز میں جاری کرنے کے لیے مختلف آپشنز پرغور شروع کردیا ہے، میٹرک بورڈ نویں جماعت سائنس گروپ کے نتائج کادستی اندراج کاعمل مکمل توکرچکا ہے تاہم نتائج کے اجرا سے محض 3 روز قبل بھی مینول اورکمپیوٹرائز ٹیبولیشن کے نتائج کے موازنے کا عمل شروع نہیں ہوسکاہے جس کے سبب 8ماہ بعدجلد بازی میں نتائج جاری کیے جانے کے سبب نتائج کی تیاری اوراجرا میں مینول ٹیبولیشن سے مدد نہ لیے جانے کا امکان ہے اورنتائج صرف کمپیوٹرائز ٹیبولیشن کی بنیاد پر ہی جاری کیے جاسکتے ہیں۔

جس سے ایک جانب نتائج کی شفافیت سوالیہ نشان بن جائے گی جبکہ دوسری جانب دستی ٹیبولیشن کی کئی ماہ تک جاری رہنے والی مشق بے سود ہوجائے گی اور اس پرآنے والے لاکھوں روپے کے اخراجات کی رقم بھی ضائع ہوجائے گی،واضح رہے کہ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کی انتظامیہ نے نتائج کی شفافیت کویقینی بنانے اوراس میں ردوبدل کے امکانات کوختم کرنے کے لیے نویں سائنس گروپ کے نتائج کی مینول ٹیبولیشن (دستی اندراج) شروع کروائی تھی، ’’ایکسپریس‘‘ کوثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے ایک اعلیٰ افسرنے نام ظاہرنہ کرنے کی شرط پربتایاکہ دستی ٹیبولیشن اور کمپیوٹرائز ٹیبولیشن کے موازنے میں ابھی مزید ایک ماہ کاوقت درکار ہے۔

جس سے نتائج میں مزید ایک ماہ تاخیر ہوسکتی ہے جبکہ ناظمامتحانات کی کوشش ہے کہ وہ نتائج ہرصورت میں 15 نومبر تک جاری کردیں، ’’ایکسپریس‘‘نے جب اس معاملے پر بورڈ کے ناظم امتحانات نعمان احسن سے رابطہ کیا توان کا کہنا تھا کمپیوٹرائز ٹیبولیشن اورایبسنٹیزنکالے جانے کاکام مکمل ہو گیاہے نتائج 15 نومبرتک جاری کردیے جائیں گے ناظم امتحانات نے اس امرکوتسلیم کیاکہ تاحال ٹیبولیشن کے مواز نے کاعمل شروع نہیں ہوسکا ہے ۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔