پاکستانی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کا پٹھان کوٹ ایئربیس کا دورہ

ویب ڈیسک  منگل 29 مارچ 2016
پاکستانی تحقیقاتی ٹیم کے پٹھان کوٹ پہنچنے پراپوزیشن جماعت کانگریس کے کارکنوں کا ایئربیس کے باہراحتجاج۔ فوٹو:انڈین ایکسپریس

پاکستانی تحقیقاتی ٹیم کے پٹھان کوٹ پہنچنے پراپوزیشن جماعت کانگریس کے کارکنوں کا ایئربیس کے باہراحتجاج۔ فوٹو:انڈین ایکسپریس

نئی دلی: پاکستان کی 5 رکنی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے پٹھان کوٹ ایئربیس کا دورہ مکمل کرلیا جب کہ خصوصی دروازے سے تحقیقاتی ٹیم کو ایئربیس کے اندر لے جایا گیا۔ 

بھارتی میڈیا کے مطابق پاکستان کی 5 رکنی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی قیادت کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ  پنجاب کے سربراہ محمد طاہر رائے کر رہے ہیں جب کہ ٹیم میں انٹیلی جنس بیورو کے محمد عظیم ارشد، آئی ایس آئی کے آفیشل لیفٹیننٹ کرنل تنویر احمد، ایم آئی کے آفیشل لیفٹیننٹ کرنل عرفان مرزا اور گوجرنوالہ سی ٹی ڈی انویسٹی گیشن آفیسر شاہد تنویر شامل ہیں جنہیں پٹھان کوٹ ایئربیس کے مرکزی دروازے کے بجائے خصوصی دروازے کے ذریعے اندر لے جایا گیا جہاں ٹیم جائے وقوعہ کا جائزہ لینے کے بعد واپس روانہ ہوگئی۔

دوسری جانب پاکستانی تحقیقاتی ٹیم کے پٹھان کوٹ ایئربیس پہنچنے کے موقع پر بھارتی اپوزیشن جماعت کانگریس کے کارکنوں کی جانب سے ایئربیس کے مرکزی دروازے کے باہراحتجاج بھی کیا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز پاکستانی تحقیقاتی ٹیم نے تفتیش کے لئے 19 گواہوں کی فہرست بھارتی حکام کے حوالے کی تھی جس میں ایس پی گورداسپور اوران کے باورچی بھی شامل ہیں جن سے پوچھ گچھ کی جائے گی۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔