دنیا کی وہ حسینائیں جنہیں وحشیانہ طریقے سے قتل کیا گیا

فاروق عبداللہ  منگل 15 نومبر 2016
دنیا کی کئی حسیناؤں کے قتل کے واقعات رونما ہوچکے ہیں لیکن اب تک کئی نامور بیوٹی کوئینز کے قتل  معمہ بنے ہوئے ہیں ۔  فوٹو : فائل

دنیا کی کئی حسیناؤں کے قتل کے واقعات رونما ہوچکے ہیں لیکن اب تک کئی نامور بیوٹی کوئینز کے قتل معمہ بنے ہوئے ہیں ۔ فوٹو : فائل

شوبز کی چکا چوند دنیا تو سب کو ہی متاثر کرتی ہے لیکن اس دنیا میں بھی عروج حاصل کرنا کسی صورت آسان نہیں اور کئی حسینائیں کامیابی کے حصول کے لیے اپنی جان سے بھی ہاتھ دھو بیٹھی ہیں جب کہ  دنیا کی کئی حسیناؤں کے قتل کے واقعات رونما ہوچکے ہیں تاہم اب تک کئی نامور بیوٹی کوئینز کے قتل  معمہ بنے ہوئے ہیں۔

مونیکا اسپیر:

مونیکا اسپیر نے اپنی خوبصورتی کے باعث 2004 میں مس وینزویلا کا اعزاز حاصل کیا تھا اور پھر 2005 میں دنیا کی پانچویں خوبصورت ترین حسینہ  قرار پائی تھیں جب کہ مس وینزویلا نے برطانوی بزنس مین تھومس ہیری سے 2008 میں شادی کرلی تھی اور امریکا منتقل ہوگئی تھیں۔ سابق مس وینزویلا اور برطانوی بزنس مین کے درمیان  2012 میں طلاق ہوگئی تھی تاہم 2014 میں سابق شوہر کے ساتھ چھٹیاں گزارنے وینزویلا گئیں جہاں کرابوبو میں ان کی گاڑی پر فائرنگ کی گئی جس کے نتیجے میں  مونیکا اسپیراور سابق شوہرموقع پر ہلاک ہوگئے۔ پولیس کی جانب سے  سابق  مس وینزویلا کے قتل کی تحقیقات کا آغاز کیا گیا لیکن 2 سال گزرنے کے باوجود آج تک قتل کی وجوہات کا تعین نہیں کیا جاسکا۔

 ماریہ جوس الویریڈو :

ماریہ جوس نے 2014 میں صرف 19 سال کی عمر میں اپنے ملک ہنڈراس کی خوبصورت ترین لڑکی کا مقابلہ جیتا اور اسی سال مس یونیورس کے مقابلے کے لیے بھی کوالیفائی کرلیا تھا لیکن مقابلہ حسن میں جانے سے چند روز قبل ہی حسینہ اپنی بہن  کے ساتھ سالگرہ کی تقریب  سے واپسی پر لاپتہ ہوگئی تھیں اور کئی روز بعد ان کی لاشیں ہنڈراس کے شہر لا اراڈا کے دریا کے کنارے قبرستان  سے  ملیں تھیں جنہیں تشدد کا نشانہ بناکردفن کردیا گیا تھا۔ مس ہنڈراس  نے مقابلہ جیتنے کے بعد ماڈلنگ اور میزبانی کا پیشہ بھی اختیار کررکھا تھا  جب کہ دونوں بہنوں کے قاتل کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے لیکن قتل کی وجوہات منظر عام پر نہیں لائی گئی ہیں۔

الیگزینڈرا پیٹرووا:

نیلی آنکھوں والی الیگزینڈرا کا تعلق روس سے تھا اور انہوں نے بھی 1996 میں 19 سال کی عمر میں روس میں ہونے والا مقابلہ حسن کا تاج اپنے نام کرلیا تھا جب کہ مس رشیا نے ماڈلنگ بھی شروع کردی تھی اور ہالی ووڈ میں بھی قدم رکھنے کو تیار تھیں لیکن اس حسینہ کی مافیا ڈان کے ساتھ دوستی نے کم عمری میں ہی اس کی جان لے لی۔ روس کے شہر چیبوک سارے میں اپنی سالگرہ سے 2 روز قبل 16 ستمبر2000 کو اپنے بوائے فرینڈ اور مافیاڈان کے ساتھ گھر میں داخل ہوتے ہوئے فائرنگ کا نشانہ بنیں اور موقع پر ہی ہلاک ہوگئیں۔

جل این ویدرویکس:

جل این ویدرویکس  ماڈلنگ اورگلوکاری کے پیشے سے منسلک تھیں اوران کا تعلق امریکی ریاست مشی گن سے تھا جب کہ جیل این کو ’’مس ہالی ووڈ‘‘ کا خطاب دیا گیا تھا جن کا قتل کا معمہ آج تک حل طلب ہے۔ مس ہالی ووڈ کی لاش 1998 میں کیلیفورنیا  کے علاقے فرسنو سے ملی تھی جس سے متعلق پولیس نے کئی دعوے کیے۔ پولیس کے مطابق جیل این جسم فروشی میں ملوث تھیں اورمنشیات کی بھی عادی تھیں تاہم ویدرویکس کا خاندان  پولیس کے الزامات کو ماننے سے انکاری ہے۔

جینی سس کارمونا:

جینی سس کا تعلق وینزویلا سے تھا اور انہوں نے اس کی ریاست  کیرابوبو کے لیے مس ٹور ازم کا ٹائٹل جیتا تھا جب کہ حسینہ جینی ملک میں بڑھتے ہوئے جرائم کے خلاف احتجاجی مظاہرے میں شریک تھیں جہاں انہیں سرمیں  گولی مار کر ہلاک کیا گیا ۔ جینی سس بھی کم عمری میں ہی موت کے منہ میں چلی گئیں جب کہ حسینہ کو فائرنگ کے بعد موٹر سائیکل پر طبی امداد کے لیے اسپتال لے جاتے ہوئے تصاویر منظر عام پر آئیں تھیں جنہوں نے خوب شہرت حاصل کی تھی۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔