ورلڈ الیون کے دورئہ پاکستان کا فیصلہ آئندہ ماہ متوقع

اسپورٹس رپورٹر  جمعـء 10 مارچ 2017
ابھی یہ بھی واضح نہیں ہوا کہ پاکستان کا دورہ کرنے والی ٹیم انٹرنیشنل یا کامن ویلتھ الیون ہوگی۔ فوٹو فائل

ابھی یہ بھی واضح نہیں ہوا کہ پاکستان کا دورہ کرنے والی ٹیم انٹرنیشنل یا کامن ویلتھ الیون ہوگی۔ فوٹو فائل

 لاہور: ورلڈ الیون کی پاکستان آمد کا فیصلہ آئندہ ماہ آئی سی سی اجلاس میں متوقع ہے۔

آئی سی سی ٹاسک فورس کے سربراہ جائلز کلارک پاکستان آئے تو لاہور میں سیف سٹی پروجیکٹ اور سیکیورٹی انتظامات سے خاصے مطمئن تھے، انھوں نے فروری میں ہونے والی آئی سی سی بورڈ میٹنگ میں ارکان کو اعتماد میں لیتے ہوئے انھیں پی ایس ایل فائنل کے موقع پر اپنے سیکیورٹی ماہرین لاہور بھجوانے کا مشورہ دیا تھا جبکہ 5 مارچ کو پشاور زلمی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کا فیصلہ کن میچ دیکھنے کیلیے آئی سی سی کے ساتھ انگلینڈ، آسٹریلیا، سری لنکا، بنگلہ دیش اور زمبابوے کرکٹ بورڈ کے عہدیدار و سیکیورٹی منیجرز بھی آئے تھے۔

دوسری جانب آئی سی سی ترجمان کا کہنا ہے کہ اپریل میں ہونے والے بورڈ اجلاس میں لاہور میں فائنل دیکھنے والوں کی رپورٹس کا جائزہ  لیا جائے گا، ارکان پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی واپسی کے حوالے سے ٹاسک فورس کی سفارشات پر مزید بات کرینگے۔

یاد رہے کہ پی ایس ایل فائنل کے اگلے روز ہی اطلاعات سامنے آئی تھیں کہ ستمبر میں 4 ٹوئنٹی 20میچز کیلیے ورلڈ الیون کو لاہور بھجوائے جانے کی منصوبہ بندی ہورہی ہے۔ ’’آزادی کپ‘‘ مقابلے 22سے 29ستمبر تک قذافی اسٹیڈیم لاہور میں شیڈول کیے جائیں گے، اس بارے میں فیصلہ آئی سی سی کے اپریل میں ہونے والے اجلاس میں ہوسکتا ہے۔

ذرائع کے مطابق ابھی یہ بھی واضح نہیں ہوا کہ پاکستان کا دورہ کرنے والی ٹیم انٹرنیشنل یا کامن ویلتھ الیون ہوگی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔