پی پی رہنما بابر بٹ کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم ساتھیوں سمیت گرفتار

ویب ڈیسک  پير 20 مارچ 2017
ملزمان کو سی آئی اے نے فون کال ٹریس کرکے پاکپتن سے گرفتار کیا، آلہ قتل بھی برآمد
فوٹو : بشکریہ ٹویٹر

ملزمان کو سی آئی اے نے فون کال ٹریس کرکے پاکپتن سے گرفتار کیا، آلہ قتل بھی برآمد فوٹو : بشکریہ ٹویٹر

 لاہور: پولیس نے پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما بابر بٹ کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم کو پاکپتن سے 5 ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق پولیس نے پیپلزپارٹی کے رہنما بابرسہیل بٹ کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم عاطف جٹ کو ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیا۔ پولیس نے ملزمان کو پاکپتن سے گرفتار کیا گیا جن میں علی جٹ، محمد دین، شاہد، سجاد اور شوکت شامل ہیں جب کہ سی آئی اے کی ٹیم نے مرکزی ملزم عاطف جٹ کوپاکپتن سےگرفتارکیا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ عاطف جٹ کو ساتھی کا موبائل فون استعمال کرنے پرٹریس کیا گیا جس کے بعد اس کی گرفتاری عمل میں آئی۔

اس خبر کو بھی پڑھیں: پیپلزپارٹی کے رہنما بابربٹ لاہور میں قتل

ذرائع کا کہنا ہے کہ عاطف جٹ نے شاہد اورشوکت کے ساتھ مل کربابربٹ کو قتل کیا تھا جب کہ تفتیشی ٹیم نے ملزموں کے بیان ریکارڈ کرنے کے بعد آلہ قتل برآمد کرلیا ہے۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ 2012 میں عاطف جٹ کے والد کو قتل کیا گیا تھا جس کا الزام عاطف جٹ نے بابربٹ پر لگایا تھا اور اس کا بد لہ لینے کے لیے عاطف جٹ نے بابرکو قتل کرایا۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔