کراچی:مزید 7افراد قتل،بھتہ نہ دینے پر بم حملہ، سماجی رہنما زخمی

اسٹاف رپورٹر  پير 21 جنوری 2013
کراچی:بلدیہ کے علاقے میں بم حملے سے تباہ ہونیوالی موٹر سائیکل اور ٹیکسی جائے وقوع پر موجود ہے۔ فوٹو: پی پی آئی

کراچی:بلدیہ کے علاقے میں بم حملے سے تباہ ہونیوالی موٹر سائیکل اور ٹیکسی جائے وقوع پر موجود ہے۔ فوٹو: پی پی آئی

کراچی: کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے دوران مزید7افرادہلاک ہوگئے جبکہ بلدیہ میں بھتہ نہ دینے پرسماجی رہنماپربم سے حملہ کیاگیاجس میں وہ اپنے گارڈز سمیت زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق بنارس پل پرانا پیرآبادنمبرایک میں بک اسٹال پرنامعلوم موٹر سائیکل سوار ملزمان نے بھتہ نہ ملنے پراندھادھند فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں60سالہ یار محمد،ان کا بیٹا22 سالہ محمد شہریار اور یار محمد کاماموں زاد بھائی30سالہ بختاورہلاک ہو گئے۔مقتول یارمحمد کے بڑے بھائی محمد قریش ایکسپریس کوبتایا کہ یارمحمد کے6بیٹے ہیں اورجاں بحق ہونے والا محمد شہریار ان کا سب سے بڑا بیٹا اورغیر شادی شدہ تھا جبکہ مقتول بختاور کی2 بیٹیاں ہیں،مقتولین کا آبائی تعلق ضلع سوات سے تھا۔

پاسبان کراچی کے صدرشیخ شکیل احمد نے ایکسپریس کوبتایا کہ یارمحمدپاسبان سائٹ ٹاؤن کے صدرتھے،حکومت شہر میں ٹارگٹ کلنگ اور دہشت گردی کا فوری خاتمہ کرے۔پولیس کے مطابق مقتول سے نامعلوم بھتہ خوروں نے ڈیڑھ ماہ قبل 10 لاکھ روپے بھتے کا مطالبہ کیا تھا جبکہ اس کے بک اسٹال کے قریب پراچہ ہوٹل کے مالک سے20 لاکھ بھتہ مانگاتھا۔بفرزون سیکٹر15-A4میں موٹرسائیکل پر سوارملزمان نے گھر سے بلا کر32 سالہ فرحان کوفائرنگ کر کے ہلاک کردیا،مقتول مکانR-152بفرزون کا رہائشی ہے اوراسے موبائل پرفون پرکال کر کے گھرسے باہر بلایاگیا،مقتول جیسے ہی گلی کے کونے پرلگے بیریئرتک پہنچاتونامعلوم مسلح ملزمان نے فائرنگ کردی،مقتول امپورٹ ایکسپورٹ کاکام کیاکرتاتھااور6 ماہ قبل ہی شادی ہوئی تھی ،اس کاکسی سیاسی یا مذہبی جماعت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

اورنگی ٹائون ڈبہ موٹر لال مسجد کے قریب موٹرسائیکل سوار2 نامعلوم ملزمان نے فائرنگ کر کے موٹر سائیکل سوار 35 سالہ ثاقب کوہلاک کردیا،متقول رئیس امروہی کالونی کارہائشی تھااوراپنی اہلیہ کے ہمراہ گھر سے کہیں جا رہاتھاکہ ڈبہ موڑ کے قریب نامعلوم موٹر سائیکل سوار ملزما ن موٹر سائیکل روک کر نشانہ بنایا، مقتول ذاکرکی 4ماہ قبل ہی شادی ہوئی تھی اورمقتول کاکسی سیاسی یامذہبی جماعت سے کوئی تعلق نہیں۔ترجمان اہلسنت والجماعت مولانااکبر سعیدفاروقی کے مطابق مقتول اہلسنت والجماعت کاکارکن تھا،فائرنگ کے واقعے میں ان کی اہلیہ اوربہن بھی زخمی ہوئی ہے۔

16

کورنگی صنعتی ایرایاکے علاقے مہران ٹائون میںD-11 منی بس اسٹاپ کے قریب نامعلوم مسلح ملزمان نے موچی کی دکان پر فائرنگ کرکے ایک شخص کو قتل کردیا،مقتول کی شناخت وزیر زادہ کے نام سے ہوئی اوروہ مہران ٹائون کارہائشی تھا،آبائی تعلق باجوڑ سے ہے۔میمن گوٹھ کے علاقے سومارکنڈانی گوٹھ میں خالی پلاٹ کے قریب نامعلوم مسلح ملزمان نے فائرنگ کرکے ایک شخص کو قتل کردیا۔مقتول کی شناخت 30 سالہ جاویدکے نام سے ہوئی ،وہ پولٹری فارم کاچوکیدار اورمیمن گوٹھ کا رہائشی ہے۔پی آئی بی کالونی تھانے کی حدودپرانی سبزی منڈی عسکری پارک کے قریب نامعلوم افراد کی فائرنگ سے 30 سالہ زمان زخمی ہو گیاجبکہ کھارادرچھٹن شاہ مزارکے قریب سے ہفتے کی شب ملنے والی لاش کی شناخت18 سالہ نعمان رضاناگوری کے نام سے اس کے والدمحمد سرور ناگوری نے کرلی۔

مقتول لیاری بغدادی تھانے کے قریب شاہ عبد الطیف بھٹائی روڈ کنگ برگر شاپ کے قریب ماشااﷲ بلڈنگ میں چوتھی منزل کا رہائشی اورنویں جماعت کا طالب علم تھا،مقتول کے والدبطورکمیشن ایجنٹ کپڑے اوردیگر سامان کاکاروبار کرتے ہیں۔بلدیہ ٹائون کے علاقے اتحاد ٹائون خیبر چوک مکان نمبر500 بلاک A کے قریب مقامی سماجی رہنمااور ٹھیکیدر محمد دین آفریدی کی کارASE-386پر بم سے حملہ کیاگیا جس کے نتیجے میں کار میں سوار سماجی رہنما کے بھتیجے رحمن شاہ،2 سیکیورٹی گارڈزشکیل،حسین اورایک راہ گیر زخمی ہو گیا۔حملے میں دین محمد آفریدی محفوظ رہے،پولیس ، رینجرز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکارموقع پر پہنچ گئے اور علاقے کوگھیرے میں لے لیا،دھماکے کے فوری بعدبم ڈسپوزل اسکواڈکوبھی طلب کرلیاگیا۔

دھماکااتناطاقتور تھاکہ اس کی آوازدور دور تک سنی گئی جبکہ دھماکے کے باعث قریبی مکان کے اگلے حصے کوشدیدنقصان پہنچا،مکان کے مرکزی گیٹ اور لوہے کی گرل ٹوٹ کر دور تک بکھر گئی دھماکے کے نتیجے میں قریبی واقع خیبر جنرل اسپتال کی کھڑکیوں اور دروازوں کو شیشے بھی ٹوٹ گئے، دھماکے میں رضا کار ادارے کی ایک ایمبولنس اور ایک ٹیکسیJL-1806 سمیت 3 سے  4گاڑیوں کو بھی شدید نقصان پہنچاجبکہ متعدد دکانوں کے شٹر اڑ گئے۔پولیس کے مطابق بم موٹر سائیکل نصب کیا گیا تھا اورریموٹ کنٹرول ڈیوائز کے ذریعے دھماکاکیاگیا،دھماکے میں 8 کلوانتہائی طاقتور باروداستعمال کیا گیا تھا جس میں بال بیرنگ بھی شامل تھے۔

انھوں نے بتایا کہ سماجی رہنما اور ٹھیکیدار دین محمد آفریدی کو بھتہ کے سلسلے میں متعدد بار فون کالز آرہی تھیں اور انہیں دھمکیاں دی جا رہیں تھیں۔بم ڈسپوزل اسکواڈکے افسر غلام مصطفیٰ نے ایکسپریس کوبتایاکہ دھماکاخیبرچوک سے500 میٹر دورکیاگیااوردھماکے کے نتیجے میں موٹرسائیکل کاانجن اورچیسزمکمل طورپرتباہ ہوگیا۔ایم کیوایم رابطہ کمیٹی نے شہرکے مختلف علاقوں میں فائرنگ کے واقعات میںکی سخت مذمت کرتے ہوئے ایک بیان میں کہاہے کہ انتہاپسنددہشتگرد ایک منصوبے کے تحت کراچی کاامن تباہ کررہے ہیں، حکومت فوری نوٹس لے اور قاتلوں کو گرفتارکرکے قرارواقعی سزادی جائے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔