شاہ رخ نومبر 2013 میں 18سال کا ہوگا، وکیل کا بیان

اسٹاف رپورٹر  بدھ 23 جنوری 2013
مقدمہ سیشن عدالت گیاخوں بہا کی بات بھی ہوسکتی ہے، ماہر ین قانون ، شاہ رخ نابالغ ہے، رپورٹ  فوٹو:فائل

مقدمہ سیشن عدالت گیاخوں بہا کی بات بھی ہوسکتی ہے، ماہر ین قانون ، شاہ رخ نابالغ ہے، رپورٹ فوٹو:فائل

کراچی: ڈیفنس کے علاقے میں ڈی ایس پی کے بیٹے کو قتل کرنے والے بارسوخ خاندان سے تعلق رکھنے والے ملزم شاہ رخ کے وکیل عامر منسوب قریشی کا کہنا ہے کہ ان کا موکل شاہ رخ جتوئی نومبر 2013 میں 18سال کا ہوگا۔

شاہ رخ کو جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے نہ کیا جائے کیونکہ اسکی عمر 18سال سے کم ہے۔ منگل کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے روبروشاہ رخ کے وکیل عامر منسوب قریشی کا موقف تھاکہ وقوعہ کے روز شاہ رخ جتوئی کی عمر 17سال اورکچھ دن تھی۔ وکیل کے مطابق کم عمر ہونے کے باعث ان کا موکل شاہ رخ 2 رعایتوں کا مستحق ہے، ایک یہ کہ اسے پھانسی کی سزا نہیںسنائی جاسکتی اور دوسری رعایت یہ ہوگی کہ اس کا مقدمہ دیگر ملزمان سے علیحدہ چلایا جائے گا۔ ایکسپریس کے رابطہ کرنے پر دہشت گردی اور فوجداری مقدمات کے ماہرین حبیب احمد اور محمد فاروق نے بھی اس کی تائید کی۔

انھوں نے کہاکہ جووینائل جسٹس سسٹم آرڈیننس 2000 کی دفعہ 12کے تحت 18سال سے کم عمر کے ملزمان کو پھانسی کی سزا نہیں دی جاسکتی۔ واضح رہے کہ اس سے پہلے کے قانون سندھ چلڈرن ایکٹ 1976 کے تحت نابالغ کی عمر16سال تھی لیکن جووینائل جسٹس سسٹم کے تحت اسے 18سال تک توسیع دیدی گئی۔ محمد فاروق ایڈووکیٹ کہا کہ 2006 میں سندھ ہائیکوٹ کے 5 رکنی بینچ نے قراردیاتھاکہ کم عمر ملزمان کے خلاف اغوا برائے تاوان، فرقہ وارانہ قتل، بم دھماکوں،دہشت گردی جیسے الزامات میں ہی انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمے کی سماعت ہوسکتی ہے ۔

12

دیگر الزامات میں جووینائل جسٹس سسٹم 2000کے تحت مقدمے کی سماعت ہوگی تاہم سندھ ہائیکورٹ کا یہ فیصلہ اتفاق رائے کے بجائے اکثریتی بنیادوں پر آیا تھا۔ کراچی  میں دہشت گردی کے مقدمات کے حوالے سے طویل تجربہ رکھنے والے سابق اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل حبیب کا موقف ہے کہ ممکن ہے کہ یہ مقدمہ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت سے سیشن عدالت منتقل کردیا جائے۔ اس صورت میں ملزمان کویہ حق حاصل ہوگاکہ وہ مقتول کے ورثا سے خون بہا وصول کرکے انھیں معاف کردیں جبکہ انسداددہشت گردی کے قوانین میں فریقین کو سمجھوتے کا اختیارنہیں ہے ۔

آن لائن کے مطابق پیر کو ملزم شاہ رخ کی عمر کا تعین کرنے کے لیے سول اسپتال میں پولیس سرجن ڈاکٹر جلیل کی سربراہی میں ٹیم نے اْس کے میڈیکل ٹیسٹ لیے تھے۔ رپورٹ تیار کرلی گئی ہے جس میں ملزم شاہ رخ جتوئی بالغ یا سن بلوغت کے قریب بتایا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق پاسپورٹ پرملزم شاہ رخ جتوئی کی عمر 17 سال ایک مہینہ ہے۔ سرجن کی تیار کردہ رپورٹ کے مطابق شاہ رخ جتوئی کی عمر 17 سے 18 سال کے درمیان ہے جبکہ اس کا قد 5 فٹ 9 انچ اور وزن 70 کلو ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔