قائداعظم سولر پارک ملکی تاریخ کا مہنگا ترین منصوبہ بن گیا

علیم ملک  جمعـء 19 مئ 2017
200 ارب روپے خرچ کرنے کے بعدصرف 160 میگاواٹ بجلی حاصل ہو سکی،ذرائع۔ فوٹو: فائل

200 ارب روپے خرچ کرنے کے بعدصرف 160 میگاواٹ بجلی حاصل ہو سکی،ذرائع۔ فوٹو: فائل

 اسلام آباد: قائداعظم سولر پارک ملکی تاریخ کا مہنگا ترین منصوبہ بن گیا تاہم منصوبے پر200 ارب روپے خرچ کرنے کے بعد صرف 160 میگاواٹ بجلی حاصل ہو سکی۔

ذرائع کے مطابق ابھی تک صرف 400میگاواٹ کے پلانٹس لگائے گئے ہیں جس میں سے 100 میگاواٹ کا ایک پلانٹ پنجاب حکومت نے لگایا اور 300 میگاواٹ کا پلانٹ زونرجی کمپنی نے لگایا، زونرجی نے 900 میگاواٹ کا پلانٹ لگانا تھا تاہم منصوبہ تاخیر کاشکار ہوتا نظر آ رہا ہے، منصوبے کے ٹیرف کے حوالے سے بھی مسئلہ پیدا ہو گیا ہے، کمپنی زیادہ ٹیرف مانگ رہی ہے اورحکومت کم ٹیرف دے رہی ہے۔

واضح رہے کہ منصوبے کا پلانٹ فیکٹر صرف 16 فیصد ہے، منصوبہ زیادہ بجلی پیدا ہی نہیں کر سکتا۔ دوسری جانب ماہرین نے اس نشاندہی کی تھی کہ پلانٹ کی تعمیر سے قبل گرڈ کو بہتر کیا جائے بصورت دیگرمنصوبے سے مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہوسکیں گے تاہم منصوبے سے ایک میگاواٹ بجلی 10کروڑ میں حاصل ہو رہی ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔