عائشہ گلالئی کے الزامات، اسپیکر نے 20 رکنی اخلاقیات کمیٹی بنانیکی منظوری دیدی

نمائندہ ایکسپریس  پير 7 اگست 2017
اسپیکر ایاز صادق نے تمام پارلیمانی رہنماؤں کا مشاورتی اجلاس آج بلالیا۔ فوٹو: فائل

اسپیکر ایاز صادق نے تمام پارلیمانی رہنماؤں کا مشاورتی اجلاس آج بلالیا۔ فوٹو: فائل

اسلام آباد: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان پر  تحریک انصاف کی باغی رکن عائشہ گلالئی کے الزامات کے بعد اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے مستقل طور پر خصوصی پارلیمانی کمیٹی برائے اخلاقیات کے قیام کی منظوری دے دی۔

ذرائع کے مطابق 20 رکنی پارلیمانی کمیٹی13حکومتی اور7 اپوزیشن اراکین پر مشتمل ہوگی۔ کمیٹی کا باضابطہ اعلان آئندہ چند دنوں میں ہوجائے گا۔ کمیٹی عمران خان اور عائشہ گلالئی کے معاملے کی  تحقیقات کے بعد رپورٹ اسپیکر قومی اسمبلی کو پیش کرے گی۔ کمیٹی مستقبل میں بھی اس قسم کی شکایات دیکھے گی۔

علاوہ ازیں اسپیکر نے پارلیمانی جماعتوں کے رہنماؤں کا اہم مشاورتی اجلاس پارلیمنٹ ہاؤس میں آج طلب کرلیاہے جس میں ایوان کی ایتھکس کمیٹی کے قیام اور اراکین سے متعلق مشاورت کی جائے گی۔ قومی اسمبلی کے اجلاس سے قبل ہونیوالی میٹنگ میں کمیٹی کے دائرہ اختیار پر بھی مشاورت کی جائے گی۔ اسپیکر نے اس سے قبل حکومت اوراپوزیشن سے پارلیمانی کمیٹی کیلیے نام طلب کیے تھے۔

کمیٹی کے قیام کی تجویز قومی اسمبلی کے اجلاس میں پیپلزپارٹی کی رہنما ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے دی تھی اس وقت اسپیکر نے وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور وزیرقانون زاہد حامد کی مشاورت سے کمیٹی کے قیام کی یقین دہائی کرائی تھی۔ آ

خبر ایجنسی کے مطابق عجلت میں بنائی گئی یہ کمیٹی حکومت کیلیے درد سر بن سکتی ہے کیونکہ اس میں عائشہ گلالئی سمیت درجنوں اسکینڈلز کے آنے کا امکان ہے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔