اسپیکر قومی اسمبلی کی کارروائی براہ راست نشر کرنے کا حکم

نمائندہ ایکسپریس  منگل 8 اگست 2017
اقدام نوازشریف نااہلی کے بعدسیاسی گولہ باری کیلیے کیاگیا،گلالئی کے معاملے پربھی یہ پلیٹ فارم استعمال کیاجائیگا، سیاسی حلقے۔ فوٹو: فائل

اقدام نوازشریف نااہلی کے بعدسیاسی گولہ باری کیلیے کیاگیا،گلالئی کے معاملے پربھی یہ پلیٹ فارم استعمال کیاجائیگا، سیاسی حلقے۔ فوٹو: فائل

 اسلام آباد:  اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے سیاسی جماعتوں بالخصوص حکومت کے مطالبے پر ایوان کی کارروائی براہ راست نشر کرنے کے احکام جاری کر دیے۔

ایوان کی کارروائی اب سرکاری ٹی وی (پی ٹی وی) پر براہ راست نشر کی جائے گی جبکہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے وزیر مملکت برائے اطلاعات ونشریات مریم اورنگزیب نے ملاقات کی ہے جس میں قومی اسمبلی کی کارروائی براہ راست نشر کرنے پر تبادلہ خیال کیا گیا جس کے بعد وزیراعظم نے ہدایت کی ہے کہ اجلاس کی کارروائی براہ راست سرکاری ٹی وی پر دکھائی جائے۔

سیاسی حلقوں کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے یہ اقدام سابق وزیراعظم نواز شریف کی نااہلی کے بعد سیاسی گولہ باری کے ضمن میں کیا گیا ہے۔ حکومت اب سرکاری ٹی وی کو سیاسی مقاصد کیلیے استعمال کرنے کی خواہاں ہے۔

دوسری طرف تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان اور رکن اسمبلی عائشہ گلالئی کے معاملے پر بھی حکومت تحریک انصاف کو ٹف ٹائم دینے کیلیے یہ پلیٹ فارم استعمال کرے گی کیونکہ اس سے پہلے مالی سال 2017-18 کے وفاقی بجٹ کے موقع پر اپوزیشن جماعتوں نے اسپیکر کو ایوان کی کارروائی براہ راست نشر کرنیکا مطالبہ کیا تھا لیکن حکومت نے اس پر کوئی عملدرآمد نہیں کیا اور اپوزیشن جماعتوں نے بجٹ کے اجلاس کا بائیکاٹ کیا تھا اور یہی وجہ تھی کہ وفاقی بجٹ اپوزیشن جماعتوں کی شمولیت کے بغیر ہی منظور کیا گیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔