کشمیری عوام کو بھارت کی محکومی قبول نہیں

ایڈیٹوریل  منگل 15 اگست 2017
پاکستان پہلے بھی کشمیریوں کے حق میں دنیا کے ہر فورم پر صدائے احتجاج بلند کرتا رہا ہے ۔ (فوٹو: فائل)

پاکستان پہلے بھی کشمیریوں کے حق میں دنیا کے ہر فورم پر صدائے احتجاج بلند کرتا رہا ہے ۔ (فوٹو: فائل)

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجی مظالم کا سلسلہ تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہا ، محاصرے، گھر گھر تلاشی، بے گناہ نوجوانوں کا قتل عام جاری ہے۔ بھارتی سیکیورٹی فورسز نے گزشتہ روز ایک مسجد کو منہدم کردیا اور چارگھروں کو دھماکے سے اڑا دیا،آپریشن کے دوران تین کشمیریوںکو بھی شہید کردیا۔ جب کہ پلوامہ میں قابض فورسزکی پیلٹ گن فائرنگ سے بھی دوکشمیری نوجوان جان کی بازی ہارگئے۔

مجاہدین کی جوابی کارروائی کے نتیجے میں دو بھارتی فوجی ہلاک اورکیپٹن سمیت 6 اہلکار زخمی ہوئے۔ یہ صورتحال ایک ایسے وقت میں شدت اختیارکرگئی ہے جب کہ بھارت آج اپنا یوم آزادی منا رہا ہے جسے تمام کشمیری ’’یوم سیاہ‘‘ کے طور پر مناتے ہیں ۔ بھرپوراحتجاج اور ہڑتال کو روکنے کے لیے گرفتاریاں ، چھاپے اور قتل عام کیا جارہا ہے ۔ بھارتی قیادت اور فوج کشمیریوں کو بزورطاقت اپنا غلام بنا کر رکھنا چاہتی ہے ۔ یہ ان کی خام خیالی ہے کہ وہ لاکھوں کی فوج کے ذریعے کشمیریوں کے ’’حق خود ارادیت‘‘ کو دبا سکتے ہیں ۔ بھارت اقوام متحدہ میں وعدہ کرنے کے باوجود اب کشمیری عوام کے حقِ آزادی کو تسلیم نہیں کرتا اور آزادانہ رائے شماری کے ذریعے انھیں اپنے مستقبل کے تعین کا موقع فراہم نہیں کرنا چاہتا اور خود اپنا یوم آزادی منانا چاہتا ہے تو ایسا کیسے ممکن ہے۔ اس کو جموں وکشمیر میں جشنِ آزادی کی تقریبات منعقد کرنے کا کوئی آئینی اور اخلاقی حق نہیں ہے۔

اسٹیٹ سبجیکٹ ایکٹ 35 اے کو بھی مودی سرکار ختم کرنا چاہتی ہے۔ ہم پاکستانی اپنا یوم آزادی منا رہے ہیں تو ہمیں یاد رکھنا چاہیے کہ آزادی ایک بہت بڑی نعمت ہے جس کی قدر اُن کشمیریوں سے جانی جاسکتی ہے جو اس عظیم نعمت سے محروم ہیں اورگزشتہ ستر برس سے آزادی کے لیے لاکھوں جانوں کی قربانی دے چکے ہیں ۔ بحیثیت پاکستانی ہمیں مقبوضہ کشمیر کے مسلمان بھائیوں کو ہرگز نہیں بھولنا چاہیے جو مسلسل دلیری اور بہادری سے بھارتی فوج کے مظالم سہہ رہے ہیں۔

پاکستان پہلے بھی کشمیریوں کے حق میں دنیا کے ہر فورم پر صدائے احتجاج بلند کرتا رہا ہے لیکن ہمیں سفارتی سطح پر اس ضمن میں مزید فعال اور مربوط کوششیں کرنی چاہئیں تاکہ اقوام عالم کو بھارت کے مظالم سے آگاہ کیا جا سکے ۔کشمیری مرد وعورتیں جس بہادری اور عزم سے قابض بھارتی فوج کا مقابلہ کررہے ہیں اُس کی کوئی نظیر تاریخ میں نہیں ملتی۔ اس جنت ارضی کو ایک دن ضرورآزادی نصیب ہوگی اور کشمیری پاکستان کے ساتھ مل کر یوم آزادی منائیں گے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔