پی سی بی کی ناقص پلاننگ؛ قومی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ فٹبال بن کر رہ گیا

اسپورٹس رپورٹر  منگل 29 اگست 2017
ایک بار پھرملتوی کیے جانے کاامکان،نومبرمیں اسٹار کرکٹرز لیگز میں مصروف ہونگے۔ فوٹو: فائل

ایک بار پھرملتوی کیے جانے کاامکان،نومبرمیں اسٹار کرکٹرز لیگز میں مصروف ہونگے۔ فوٹو: فائل

 لاہور:  پی سی بی کی ناقص پلاننگ کے باعث قومی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹورنامنٹ فٹبال بن کر رہ گیا ہے، اسے ایک بار پھر ملتوی کیے جانے کا امکان پیدا ہوگیا۔

جلد بازی میں بغیر سوچے سمجھے شیڈول کیا جانے والا قومی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹورنامنٹ آگے سرکتا ہوا نومبر تک پہنچا تھا لیکن اس کے وہاں بھی ٹھہرنے کا امکان نظر نہیں آتا، قبل ازیں مقابلے 25اگست سے ملتان میں شروع ہوکر فیصل آباد میں ختم ہونا تھے، کھلاڑیوں کے ڈرافٹ کا مرحلہ مکمل ہونے کے بعد ستمبر کے پہلے ہفتے فیصل آباد میں ایونٹ شروع کرانے کیلیے انتظامات کا بھی آغاز کردیا گیا، مگر نیا شیڈول بناتے ہوئے ورلڈ الیون کے ممکنہ دورے کو پیش نظر نہیں رکھا گیا، دوسری جانب سیریز کا حتمی فیصلہ ہونے اور کرکٹرز کو انگلش کائونٹی وکیریبیئن لیگ میں شرکت کا موقع دینے کا جواز پیش کرتے ہوئے قومی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ 4سے 19 نومبر میں کرانے کا اعلان کردیا گیا لیکن اس ماہ کی مصروفیات کو قطعی طور پر نظر انداز کردیا۔

ادھر ہارون رشید کی سربراہی میں کام کرنے والے شعبہ کرکٹ آپریشنز میں سے کسی کو خیال نہیں رہا کہ اس دوران اسٹار کرکٹرز بنگلادیش پریمیئر لیگ اور جنوبی افریقی گلوبل ٹی ٹوئنٹی لیگ میں مصروف ہونگے، 2 نومبر سے شروع ہونیوالی بنگلادیش لیگ کیلیے 15 قومی کرکٹرز نے معاہدے کیے ہیں، گلوبل لیگ 4 نومبر سے 16 دسمبر تک شیڈول ہے جس کیلیے 9 پاکستانی کھلاڑیوں کا انتخاب کیا جا چکا۔ اس صورتحال میں قومی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کا نومبر میں انعقاد خطرے میں پڑگیا اور اسے ملتوی کیے جانے کا امکان ہے، اگر مقابلے کرائے بھی گئے تو بڑے ناموں کی غیر موجودگی میں رنگ پھیکا رہے گا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔