سمجھوتہ ٹرین سے بھارتی سامان کی اسمگلنگ ناکام

 ہفتہ 9 ستمبر 2017
سمجھوتہ ٹرین سے ہونیوالی اسمگلنگ میں واہگہ ریلوے اسٹیشن پر تعینات کسٹم کا عملہ ملوث ہے، رپورٹ میں انکشاف۔ فوٹو: فائل

سمجھوتہ ٹرین سے ہونیوالی اسمگلنگ میں واہگہ ریلوے اسٹیشن پر تعینات کسٹم کا عملہ ملوث ہے، رپورٹ میں انکشاف۔ فوٹو: فائل

 لاہور:  محکمہ کسٹم (پری وینٹیو) لاہور نے سمجھوتہ ایکسپریس کے ذریعے بھارت سے آنے والی سمجھوتہ ٹرین سے لاکھوں روپے مالیت کے مصنوعی زیورات، چادریں اور شالیں پاکستان لانے کی کوشش ناکام بنا دی۔

محکمہ کسٹم (پری وینٹیو) لاہور نے سمجھوتہ ایکسپریس کے ذریعے بھارتی سامان کی پاکستان میں اسمگلنگ کیخلاف کریک ڈاون کا آغاز کرتے ہوئے گزشتہ روز بھارت سے آنے والی سمجھوتہ ٹرین کے 13مسافروں کے سامان میں موجود لاکھوں روپے مالیت کے مصنوعی زیورات، چادریں اور شالیں پاکستان لانے کی کوشش ناکام بنا دی جبکہ واہگہ ریلوے اسٹیشن پر تعینات کسٹم کی پوری شفٹ کو معطل کر دیا گیا۔

کلکٹر کسٹم (پری وینٹیو) لاہور فیض احمد کو مختلف ذرائع سے یہ اطلاعات موصول ہوئی تھیں کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان چلنے والی سمجھوتہ ایکسپریس کے ذریعے بہت وسیع پیمانے پر بھارتی سامان کی پاکستان میں اسمگلنگ ہو رہی ہے تو ایڈیشنل کلکٹر کسٹم عثمان باجوہ نے واہگہ ریلوے اسٹیشن پر اس وقت چھاپہ مارا جب سمجھوتہ ٹرین بھارت سے وہاں پہنچی۔

ایڈیشنل کلکٹر عثمان باجوہ نے تفتیش کے بعد کلکٹر کسٹم فیض احمد کو بھیجی گئی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ سمجھوتہ ٹرین سے ہونیوالی اسمگلنگ میں واہگہ ریلوے اسٹیشن پر تعینات کسٹم کا عملہ ملوث ہے، تاہم ایڈیشنل کلکٹر نے کلکٹر کسٹم سے درخواست کی ہے کہ فیکٹ فائنڈنگ انکوائری کروا کر قصور واروں کیخلاف کارروائی کی جائے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔