کراچی :چھاتی کے سرطان کے حوالے سے ورکشاپ، ترک ڈاکٹر نے 5 آپریشن کیے

سمیر مندھرو  جمعرات 21 فروری 2013
بریسٹ کینسر کے 80 فیصد مریض اس وقت ڈاکٹر کے پاس آتے ہیں جب بیماری بہت زیادہ پھیل چکی ہوتی ہے, ڈاکٹر سلیم سومرو.  فوٹو: فائل

بریسٹ کینسر کے 80 فیصد مریض اس وقت ڈاکٹر کے پاس آتے ہیں جب بیماری بہت زیادہ پھیل چکی ہوتی ہے, ڈاکٹر سلیم سومرو. فوٹو: فائل

کراچی: جناح اسپتال میں جونسن اینڈ جونسن فارماسوٹیکل کمپنی کے اشتراک سے بریسٹ آگمنٹیشن اینڈ ری کنسٹرکشن کے حوالے سے ورکشاپ کے دوران ترک ڈاکٹر سی ریحا یاووزر نے ڈاکٹروں کے ساتھ ملکر  5 سرجریز کیں، ترک ڈاکٹر نے لیکچر بھی دیا۔

پروفیسر ڈاکٹر صغریٰ پروین نے کہا کہ اگر ابتدائی اسٹیج پر بریسٹ کینسر کی تشخیص ہوجائے تو آپریشن کرکے ٹیومر کو نکالا جاسکتا ہے، دیہی اور شہری علاقوں میں بہت سی خواتین اپنے والدین کو بیماری کے بارے میں بتانے سے ہچکچاتی ہیں۔

ڈاکٹر سلیم سومرو کا کہنا تھا کہ  بریسٹ کینسر کے 80 فیصد مریض اس وقت ڈاکٹر کے پاس آتے ہیں جب بیماری بہت زیادہ پھیل چکی ہوتی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔