ایس ایس پی تشدد کیس میں اشتہاری عمران خان کی جائیداد ضبط ہونے کا امکان

ویب ڈیسک  جمعـء 13 اکتوبر 2017
چیف کمشنر اسلام آباد نے پی ٹی آئی چیرمین کی جائیداد کی تفصیلات عدالت میں جمع کرادیں۔ فوٹو: فائل

چیف کمشنر اسلام آباد نے پی ٹی آئی چیرمین کی جائیداد کی تفصیلات عدالت میں جمع کرادیں۔ فوٹو: فائل

 اسلام آباد: ایس ایس پی عصمت اللہ جونیجو تشدد کیس میں اشتہاری پاکستان تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان کی جائیداد ضبط ہونے کا امکان پیدا ہوگیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق انسداد دہشت گردی کی عدالت نے عمران خان اور طاہر القادری کے خلاف ایس ایس پی عصمت اللہ جونیجو تشدد کیس کی سماعت کی۔ چیف کمشنر اسلام آباد نے پی ٹی آئی چیرمین عمران خان  اور پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کی جائیداد کی تفصیلات عدالت میں پیش کیں۔ عدالت نے کہا کہ میانوالی اور لاہور سے جائیداد کی تفصیل ملنے پر عمران خان کی جائیداد قرق کرلی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں: ایس ایس پی تشدد کیس؛ عمران خان اورطاہرالقادری کے وارنٹ گرفتاری برقرار

چیف کمشنر اسلام آباد کی جانب سے عدالت میں جمع کرائی گئی رپورٹ کے مطابق عمران خان کی اسلام آباد میں 3 سوکنال اراضی موہڑہ نور میں ہے جب کہ دوسرے اشتہاری ملزم طاہر القادری کی اسلام آباد میں کوئی جائیداد نہیں۔ عمران خان نے جمائما کے نام 3 سوکنال بے نامی جائیداد 43 کروڑ روپے میں خریدی، جمائما نے ہبہ کے ذریعے اراضی عمران خان کے نام کی، میانوالی اور لاہور سے جائیداد کی تفصیل ملنے پر عمران خان کی جائیداد قرق کی جاسکتی ہے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔