دنیا کی طویل العمر ڈولفن مرگئی

ویب ڈیسک  جمعرات 2 نومبر 2017
سب سے زیادہ عمر پانے والی ڈولفن جاپان کے مچھلی گھر  میں زندگی کی بازی ہار گئی،فوٹو:انٹرنیٹ

سب سے زیادہ عمر پانے والی ڈولفن جاپان کے مچھلی گھر میں زندگی کی بازی ہار گئی،فوٹو:انٹرنیٹ

ٹوکیو: دنیا کی سب سے زیادہ عمر پانے والی ڈولفن جاپان کے مچھلی گھر میں زندگی کی بازی ہار گئی۔

جاپانی حکام نے اعلان کیا ہے کہ ملک کے وسطی شہر شیزوکا کے  ایکویریم میں  پالی گئی دنیا کی طویل العمر ڈولفن کا اعزاز پانے والی نانا ڈولفن 47 برس میں مر گئی۔ عام طور پر ڈولفنز کی اوسط زندگی 10 سے 15 سال تک محدود ہوتی ہے لیکن نانا ڈولفن نے چار دہائیوں سے زائد زندگی پائی اور حال ہی میں اسے دنیا کی سب سے لمبی عمر پانے والی ڈولفن کا اعزاز بھی ملا تھا۔

یہ خبر بھی پڑھیں: دنیا کا نایاب ترین سورج مکھی بن مانس

حکام کا کہنا ہے کہ نانا ڈولفن کو گزشتہ ماہ ہی شیمودا سٹی نے باقاعدہ طور پر رہائش کے خصوصی سرٹیفکیٹ سے نوازا تھا۔ نانا کو مچھلی گھر کی شان وشوکت کی علامت سمجھا جاتا تھا اور پورے جاپان سے لوگ اس نایاب ڈولفن کو خصوصی طور پر دیکھنے کے لیے آتے تھے۔

ڈولفن جسے عام طور پر مچھلی کہا جاتا ہے دراصل  یہ ممالیہ جانور ہیں۔ سمندری مخلوقات میں ذہین ترین مخلوق سمجھی جانے والی ڈولفن کو مختلف کرتبوں کے لیے سدھایا بھی جاسکتا ہے اور انسانوں کے بعد ڈولفن وہ جاندار ہے جس کی یادداشت سب سے طویل ہوتی ہے۔ یہ 20 سال بعد بھی اپنے پرانے ساتھیوں کو پہنچان لیتی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔