سپریم کورٹ؛ چیئرمین نیب کو ہٹانے کی درخواست پر اعتراضات عائد

ویب ڈیسک  بدھ 16 مئ 2018
درخواست گزار نے متعلقہ فورم سے رجوع نہیں کیا اور اس کی وجوہات بھی نہیں بتائیں، رجسٹرار آفس فوٹو:فائل

درخواست گزار نے متعلقہ فورم سے رجوع نہیں کیا اور اس کی وجوہات بھی نہیں بتائیں، رجسٹرار آفس فوٹو:فائل

 اسلام آباد: سپریم کورٹ نے چیئرمین نیب کو ہٹانے کی درخواست پر اعتراضات عائد کردیے۔

سپریم کورٹ رجسٹرار آفس نے قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کو ہٹانے کیلئے دائر درخواست پر اعتراضات عائد کردیئے۔ رجسٹرار آفس نے اعتراض میں کہا کہ درخواست گزار نے کسی متعلقہ فورم سے رجوع نہیں کیا اور اس کی وجوہات بھی نہیں بتائیں، فراہم کیا گیا سرٹیفکیٹ سپریم کورٹ قواعد و ضوابط کے مطابق نہیں۔

یہ بھی پڑھیں: چیئرمین نیب کو ہٹانے کیلئے سپریم کورٹ میں درخواست

مسلم لیگ ن کے رہنما نور اعوان نے چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو عہدے سے ہٹانے کے لیے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ 8 مئی کو نیب نے اعلامیہ جاری کیا کہ نواز شریف نے 4.9 ارب ڈالر بھارت منتقل کیے، 21 ستمبر 2016ء کو اسٹیٹ بینک اس خبر کی تردید کرچکا تھا، اس جھوٹی خبر سے نیب کی ساکھ بری طرح متاثر ہوئی، موجودہ چیئرمین نیب جاوید اقبال کے ہوتے ہوئے نیب شفاف کام نہیں کرسکتا، عدالت چیئرمین نیب کو فوری طور پر عہدے سے ہٹانے کی کارروائی کرے۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔