کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی سیالکوٹ کیس؛ نیب کی خواجہ آصف سے ڈیڑھ گھنٹے پوچھ گچھ

ویب ڈیسک / طالب فریدی  جمعـء 3 جولائ 2020
خواجہ آصف سے کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی سیالکوٹ کیس میں پوچھ گچھ کی جارہی ہے فوٹو: فائل

خواجہ آصف سے کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی سیالکوٹ کیس میں پوچھ گچھ کی جارہی ہے فوٹو: فائل

 لاہور: نیب کی 3 رکنی ٹیم نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ آصف سے کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی سیالکوٹ کیس میں ڈیڑھ گھنٹے پوچھ گچھ کی ہے۔

لیگی رہنما خواجہ آصف ڈیڑھ گھنٹے سے زیادہ دیر نیب آفس میں گزارنے کےبعد واپس چلے گئے۔ نیب کی 3 رکنی مشترکہ ٹیم نے سیالکوٹ کینٹ ہاوسنگ اسکیم کے حوالے سے ان سے سولات کیے۔ پیشی کے بعد خواجہ آصف میڈیا سے کوئی بات کیے بغیر ہی روانہ ہوگئے۔ انہوں نے گاڑی میں بیٹھے ہوئے بھی کسی بات کا جواب نہیں دیا۔

نیب نے خواجہ آصف کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کی ہدایت کی تھی۔ نیب نے خواجہ آصف کو اس سے قبل 26 جون کو طلب کیا تھا۔خواجہ آصف کی جانب قومی اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں شرکت اور دوبارہ نئی تاریخ مانگی گی تھی۔ خواجہ آصف کی جانب سے وکیل نجم الحسن نے نیب حکام کو جواب جمع کرایا تھا۔ نیب حکام نے جواب کا جائزہ لینے کے بعد غیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے دوبارہ طلب کیا تھا۔

خواجہ آصف سے کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی سیالکوٹ کیس میں پوچھ گچھ کی جارہی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب نے خواجہ آصف سے کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی سیالکوٹ میں کی گئی سرمایہ کاری کی مالیت اور اس کے ذرائع سے متعلق پوچھا تھا۔ اس کیس میں خواجہ آصف کی اہلیہ اور بیٹا سیالکوٹ میں بھی نیب کے سامنے پیش ہو چکے ہیں.

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔