کورونا میں اضافہ؛ شادی ہالز، تعلیمی اداروں سمیت انڈور اور آؤٹ ڈور ڈائننگ بند

ویب ڈیسک  جمعـء 23 جولائ 2021
ان تمام فیصلوں پرپیرسے عملدرآمد کرایا جائے گا: فوٹو: فائل

ان تمام فیصلوں پرپیرسے عملدرآمد کرایا جائے گا: فوٹو: فائل

 کراچی: سندھ میں کورونا کیسزمیں اضافے کے باعث ایک بار پھر شادی ہالز، تعلیمی ادارے سمیت انڈور آؤٹ ڈورڈائننگ بند کردی گئی جب کہ بازاروں کے اوقات کار شام چھ بجے تک ہوں گے۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیرصدارت کورونا وائرس سے متعلق صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں ایک بار پھرکورونا کے بڑھتے ہوئے اعدادوشمار کے پیش نظربڑے فیصلے کیے گئے۔

اجلاس میں پیرسے تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا تاہم امتحانات اپنے شیڈول کے مطابق ہوں گے۔ شادی ہال اور دیگر تقریبات پر پابندی عائد ہوگی، ریسٹورنٹس میں انڈور اور آؤٹ ڈور ڈائننگ دونوں بند کردی گئیں، صرف ٹیک اووے کی اجازت ہوگی۔

اجلاس میں مزید فیصلہ کیا گیا کہ کریانہ، بیکری اور فارمیسی کھلی رہیں گی تاہم شاپنگ مالز، مارکیٹ صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک کھلے رہیں گی۔

یہ پڑھیں : کورونا ویکسین نہ لگوانے والوں کی موبائل سمز بند کرانے کی سفارش

 

اجلاس میں درگاہیں بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سرکاری اور نجی سیکٹر میں 50 فیصد اسٹاف حاضر ہوگا، وزیٹر کے داخلے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ ان تمام فیصلوں پر پیر سے عمل درآمد کرایا جائے گا۔

نوٹی فکیشن جاری

سندھ حکومت نے اس حوالے سے نوٹی فکیشن جاری کردیا جس کے جمعہ اور اتوار کے روز کاروباری مراکز مکمل بند رہیں گے اورسیف ڈیز میں اگر اوقات کار کی خلاف ورزی ہوئی تو کارروائی ہوگی جبکہ مذکورہ بالا تمام احکامات آئندہ ایک ہفتہ تک نافذ العمل ہوں گے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔