پانچ سالہ توانائی بچت منصوبہ شروع، پہلے عمارتوں کا انرجی آڈٹ ہوگا

آئی این پی  بدھ 12 اپريل 2023
بلڈنگ کوڈز پر عملدرآمد سے50 سے60فیصد توانائی بچائی جاسکے گی، ایم ڈی انرجی اتھارٹی
 (فوٹو فائل)

بلڈنگ کوڈز پر عملدرآمد سے50 سے60فیصد توانائی بچائی جاسکے گی، ایم ڈی انرجی اتھارٹی (فوٹو فائل)

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے توانائی بچت کے 5 سالہ منصوبے پرکام شروع کرنیوالی ہے جس میں تمام سرکاری اور نیم سرکاری عمارتوں کو توانائی بچانے والی عمارات میں تبدیل کردیا جائیگا۔

نیشنل انرجی ایفیشنسی اینڈکنزرویشن اتھارٹی کے منیجنگ ڈائریکٹر سردار معظم کے مطابق توانائی بچت کا پلان پہلے 10 سال کیلیے بنایا گیا تھا جسے اب 5 سال تک محدود کردیا گیا ہے۔

بلڈنگ کوڈز پر موثر عمل درآمدر سے 50 سے 60 فیصد تک توانائی کی بچت کی جا سکے گی اور تمام بڑی عمارتوں کے انرجی آڈٹ کے بعد توانائی بچت کے ایکشن پلان پر مرحلہ وارکام شروع کیا جائیگا۔

پروگرام کے دوسرے مرحلے میں کمرشل، صنعتی اور گھریلو سیکٹرکو گیس کے بجائے کم بجلی استعمال کرنے والے آلات کو فروغ دیا جائیگا، حکومت صارفین کو ایسے آلات کی فراہمی میں مدد دیگی۔

اتھارٹی کے مطابق توانائی بچت کے5 سالہ پلان پر سرمایہ کاری کیلیے ورلڈ بینک سمیت مختلف عالمی اداروں سے مالی تعاون کیلیے رابطہ کیا جارہا ہے، کوشش ہے اس مد میں گرانٹ کی شکل میں زیادہ فنڈنگ مل سکے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔