پاکستان سنگل ونڈو نظام میں مزید سرکاری محکموں کی شمولیت

بزنس رپورٹر  جمعـء 18 اگست 2023
انضمام سے سرحدپار تاجروں کو خدمات اور سہولتیں فراہم کرنے میں واضح بہتری آ چکی۔ فوٹو: نیٹ

انضمام سے سرحدپار تاجروں کو خدمات اور سہولتیں فراہم کرنے میں واضح بہتری آ چکی۔ فوٹو: نیٹ

کراچی: پاکستان سنگل ونڈو نظام میں مزید سرکاری محکمے شمولیت ہو گئے۔

پاکستان سنگل ونڈو نظام نے دوسرے مرحلے کی تکمیل میں مزید 4 سرکاری محکموں تک ڈیجیٹل خدمات کا نیٹ ورک وسیع کر دیا ہے جن میں مرین مرکنٹائل ڈپارٹمنٹ، مرین فشریز ڈپارٹمنٹ، وزارتِ انسدادِ منشیات اور ڈرگ ریگولیٹری آتھارٹی جزوی طورپر شامل ہے۔

اس انضمام سے ان اداروں کی سرحد پار تاجروں کو خدمات اور سہولتیں فراہم کرنے میں واضح بہتری اور تیزی آچکی ہے جن میں سرٹیفکیٹ، لائسنس اور اجازت ناموں کا فوری اجرا شامل ہے۔

اس ضمن میں پی ایس ڈبلیو نے ایم این سی اور ایم ایف ڈی کو خودکار نظام سے آراستہ کیا ہے جس کی وجہ سے درآمداتی اجازت نامہ اور برآمداتی سرٹیفکیٹ کی تیاری اور ترسیل کم وقت میں الیکٹرانک ذریعہ سے فراہم کی جاتی ہے جس کی وجہ سے کاروبار میں وقت اور لاگت کی بچت ہو جاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان سنگل ونڈو نے اپنی خدمات کا دائرہ کار ڈرائی پورٹس تک بڑھا دیا

اسی طرح ڈریپ میکانزم کے دائرہ کار میں آنیوالے اداروں کیلیے رجسٹریشن اور منظوری کے عمل کو تیز کرتا ہے جبکہ ایم ایم ڈی کے نظام میں موثر تبدیلی کی گئی جس کے بعد استعمال شدہ جہازوں اور کشتیوں کی درآمدات کے درخواستیں آن لائن جمع کرائی جا سکتی ہے اور سی ویرتھنس سرٹیفکیٹ کا اجرا بھی جدید الیکٹرانک انداز میں کیا جاتا ہے۔

پی ایس ڈبلیو نے سندھ، ایکسائز، ٹیکسیشن اور انسداد منشات کے ڈپارنمنٹ سے بھی کامیابی سے الحاق کرلیا ہے جس کی بدولت صوبائی محصولات کو تاجروں سے اکٹھا کرنے میں آسانی ہو چکی ہے۔

ان مراحل کی کامیاب تکمیل کے موقع پر سی ای او پاکستان سنگل ونڈو سید آفتاب حیدر کا کہنا ہے کہ پی ایس ڈبلیو کاروبار، تاجر اور ان سے منسلک محکموں کوایک جدید اور منفرد سہولیات فراہم کرنے کیلیے کاوشیں کر رہا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔