گندم سبسڈی پر مذاکرات ناکام، گلگت میں شٹر ڈاؤن ہڑتال

شکور اعظم رومی  ہفتہ 2 دسمبر 2023
حکومت سبسڈی ختم کرنے کا فیصلہ واپس لے ورنہ گلگت کو جام کردیں گے، کمیٹی (فوٹو: فائل)

حکومت سبسڈی ختم کرنے کا فیصلہ واپس لے ورنہ گلگت کو جام کردیں گے، کمیٹی (فوٹو: فائل)

گلگت: صوبائی حکومت گلگت بلتستان اور عوامی ایکشن کمیٹی کے گندم سبسڈی کے تنازعے پر مذاکرات ناکام ہونے پر سبسڈی کے خاتمے کیخلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال شروع کردیا۔

عوامی ایکشن کمیٹی کی کال پر جمعہ کے روز گلگت کی تمام مرکزی مارکیٹیں بند رہیں، جس سے تمام کاروباری سرگرمیاں معطل ہوکر رہ گئیں، تاہم ٹریفک کی آمدورفت جاری رہی۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ، پنجاب، کے پی میں گندم اجرائی قیمت تقریباً یکساں، بین الاصوبائی اسمگلنگ کا راستہ بند

عوامی ایکشن کمیٹی کے مطابق جب تک سبسڈی کو دوبارہ بحال نہیں کیا جاتا، تب تک احتجاج کاسلسلہ جاری رہیگا، پہلے مرحلے پر شٹرڈاون ہڑتال پھر پہیہ جام ہڑتال ہوگی، گندم کی سبسڈی کو محدود کرنے کے خلاف بھرپور مظاہرے کیے جائیں گے۔

عوامی ایکشن کمیٹی کے ذمے داروں کا کہنا ہے کہ گلگت بلتستان حکومت گندم سبسڈی کو ختم کرنے کا فیصلہ واپس لے، ورنہ پورے گلگت بلتستان کوجام کردیںگے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔