آئی ایم ایف کو خط لکھنے پر پی ٹی آئی کو سیاسی قیمت ادا کرنا پڑے گی، نگران وزیراعظم

 بدھ 28 فروری 2024
انوارالحق کاکڑ نے آئی ایم ایف سے 6 ارب ڈالر کے معاہدے کی امید ظاہر کی—فائل: فوٹو

انوارالحق کاکڑ نے آئی ایم ایف سے 6 ارب ڈالر کے معاہدے کی امید ظاہر کی—فائل: فوٹو

 اسلام آباد: نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی جانب سے عالمی مالیاتی ادارہ (آئی ایم ایف) کو لکھے گئے خط پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس پر ان کو سیاسی قیمت ادا کرنا پڑے گی۔

نجی ٹی وی کو انٹرویو میں انوار الحق کاکڑ نے کہا کہ آئی ایم ایف کو خط غیر ذمہ دارانہ اقدام ہے، انتخابی معاملات کا فورم آئی ایم ایف نہیں ہے، پی ٹی آئی کو اس کی سیاسی قیمت ادا کرنا پڑے گی۔

انہوں نے کہا کہ بیرونی قوتوں کے سامنے سرنڈر نہ کرنا ان کا بیانیہ ہے، اس وقت مثبت انداز میں بات ہورہی ہے، امید ہے 6 ارب ڈالر کے لیے آئی ایم ایف سے بات ہوجائے گی۔

یہ بھی پڑھیں: پی ٹی آئی کا آئی ایم ایف کو خط؛ مندرجات منظر عام پر آگئے

نگران وزیراعظم نے ایک سوال پر کہا کہ جج نے لاپتہ افراد کی بازیابی کے حوالے سے نگراں حکومت کی کوششوں کو سراہا، عدالتوں کی عزت اور اُن کے سامنے سرنڈر کرنا چاہیے۔

انوارالحق نے کہا کہ لاپتا افراد کے اعداد و شمار غلط بتائے جاتے ہیں، بہت سارے لوگ افغان کیپمپوں میں رہ رہے ہیں، میڈیا پر بیانیہ بنانے سے مسئلہ حل نہیں ہوگا، اس حوالے سے صوبے اور وفاق کی سطح پر کمیشن بنائے گئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی کبھی حکومت اور کبھی ریاست مخالف عناصر کی طرف سے ہوتی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔