توہین قرآن کیس میں ملزم کو عمر قید کی سزا؛ مقدمہ بیوی نے درج کرایا تھا

کورٹ رپورٹر  منگل 21 مئ 2024
(فوٹو : فائل)

(فوٹو : فائل)

  کراچی: ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج وسطی ذبیحہ خٹک نے توہین قرآن کا جرم ثابت ہونے پر ملزم کو عمر قید بامشقت کی سزا سنا دی۔

عدالت نے ملزم زعیم عمران کے خلاف مقدمے کا فیصلہ سنا دیا، استغاثہ جرم ثابت کرنے میں کامیاب رہا۔

عدالت نے فیصلے میں کہا کہ ملزم کو دفعہ 295 بی کے تحت سنائی گئی، ملزم نے نا صرف قانون کی خلاف ورزی کی بلکہ گناہ کا بھی مرتکب ہوا۔ ملزم نے ایسے اقدام سے معاشرے کے احساسات کو ٹھیس پہنچائی ہے، جو ملزم نے اپنے موقف میں دعویٰ کیا تھا وہ اسے ثابت نا کرسکا۔ ملزم نہیں بتا سکا کہ اگر اس نے بے حرمتی نہیں کی تو کس نے کی۔

پراسیکیوٹر حنا ناز نے موقف اپنایا تھا کہ ملزم کے خلاف اس کی بیوی نے مقدمہ درج کروایا تھا، بیوی کے موبائل استعمال کرنے پر شوہر نے مدعيہ پر الزام لگایا۔ ملزم نے کہا کہ تم قرآن پر حلف لو کہ تم کسی اور سے رابطے میں نہیں، قرآن پر حلف اٹھایا تو شوہر نے پھر بھی یقین نہیں کیا جس کے بعد شوہر نے قرآن پاک کو آگ لگا دی۔ بیوی نے روکنے کی کوشش کی تو تشدد کیا۔ اس واقعے کے بعد مدعیہ نے مقدمہ درج کروا کر خلع لے لی۔

ملزم نے عدالت میں صحت جرم سے انکار کیا۔ ملزم نے موقف اختیار کیا کہ اس کی بیوی نے غلط الزام لگایا کیوںکہ اس کے ناجائز تعلقات ہیں۔

پولیس کے مطابق توہینِ قرآن کا واقعہ فروری 2022 کو پیش آیا تھا، ملزم کے خلاف تھانہ تمیموریہ میں مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔