میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کی کشتی ڈوب گئی؛17 جاں بحق

ویب ڈیسک  جمعرات 10 اگست 2023
مسلم کش فسادات کے باعث روہنگیا مسلمان ملائیشیا اور انڈونیشیا جانے کی کوشش کررہے تھے، فوٹو: فائل

مسلم کش فسادات کے باعث روہنگیا مسلمان ملائیشیا اور انڈونیشیا جانے کی کوشش کررہے تھے، فوٹو: فائل

رخائن: میانمار میں 50 روہنگیا مسلمان تارکین وطنوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 17 افراد جاں بحق ہوگئے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق میانمار کی متاثرہ ریاست رخائن میں مسلم کش فسادات کے باعث روہنگیا مسلمان اپنی جانیں بچا کر کشتی کے ذریعے ملائیشیا اور انڈونیشیا میں داخل ہونے کی کوشش کرر ہے تھے لیکن کشتی الٹ گئی۔

امدادی کاموں کے دوران 17 افراد کی لاشیں نکالی جا چکی ہیں جب کہ 8 افراد کو بچالیا گیا۔ امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ کشتی میں 50 سے زائد افراد سوار تھے۔ بقیہ افراد کی تلاش جاری ہے۔

یاد رہے کہ ہر سال ہزاروں روہنگیا باشندے اپنی جانوں کو خطرے میں ڈال کر بنگلا دیش کے کیمپوں سے نکل کر کسی دوسرے محفوظ مقام پر جانے کے لیے ہنگامہ خیز سمندری سفر کا انتخاب کرتے ہیں۔

بدھ مت کی اکثریت والے ملک میانمار کے رخائن میں تقریباً 6 لاکھ روہنگیا مسلمان آباد ہیں تاہم انھیں بنگلا دیش سے نقل مکانی کرنے والے تصور کیا جاتا ہے۔ انھیں شہریت اور نقل و حرکت کی آزادی سے بھی محروم رکھا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ 2017 میں میانمار کے فوجی کریک ڈاؤن نے قتل، آتش زنی اور عصمت دری کے وسیع واقعات کے بعد تقریباً 2 لاکھ 75 ہزار روہنگیا مسلمان کو رخائن سے بنگلا دیش جانے پر مجبور ہوگئے تھے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔