قرآن کی بے حرمتی؛ لبنان میں سویڈن کے سفارت خانے پر حملہ

ویب ڈیسک  جمعرات 10 اگست 2023
لبنان میں سویڈن سفارت خانے پر بم حملہ، فوٹو: فائل

لبنان میں سویڈن سفارت خانے پر بم حملہ، فوٹو: فائل

بیروت: لبنان میں قرآن کی بے حرمتی کی اجازت دینے والے ملک سویڈن کے سفارت خانے پر حملے میں دیسی ساختہ بم پھینکا گیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق لبنان کے دارالحکومت بیروت میں واقع سویڈن کے سفارت خانے پر ایک شخص نے دیسی ساختہ بم مارا لیکن یہ بم پھٹ نہیں سکا اور اس حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

سویڈن کے سفارت خانے کے ایک سفارتی ذریعے نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر عالمی خبر رساں ادارے کے نمائندے کو بتایا کہ سفارت خانے کے دروازے پر ایک دیسی ساختہ بم پھینکا گیا تھا۔

یہ خبر پڑھیں : ڈنمارک میں بھی قرآن پاک جلانے کی ناپاک جسارت

سویڈن کے وزیر خارجہ ٹوبیاس بلسٹروم نے کہا کہ خوش قسمتی سے حملے میں کوئی زخمی نہیں ہوا اور عملہ محفوظ رہا۔ اس واقعے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

سویڈن میں قرآن پاک کی بے حرمتی کے بعد دیگر مسلم ممالک کی طرح لبنان میں شدید احتجاج دیکھنے کو ملا۔ حزب اللہ نے سویڈن کے سفیر کو ملک بدر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

جس پر لبنانی سکیورٹی فورسز نے حملوں کے خدشے کے سودیڈن کے سفارت خانے کے اردگرد سخت حفاظتی اقدامات کیے تھے جس کے باعث حملہ آور اندر داخل نہیں ہوسکا۔

یہ خبر بھی پڑھیں : سویڈن میں ایک بار پھر قرآن پاک کی بےحرمتی؛ عراقی پرچم بھی جلایا گیا 

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ سویڈن میں دو عراقی نژاد تارکین وطن نے قرآن پاک کو جلانے کی ناپاک جسارت کی تھی جب کہ ایسی ہی ایک حرکت ڈنمارک میں کی گئی تھی۔

جس پر مسلم دنیا میں شدید غم و غصہ پایا گیا اور او آئی سی سمیت دیگر عالمی برادری نے شدید احتجاج کیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔