افغانستان میں پاکستانی طالبان پر اسلحہ لے کر چلنے پر پابندی

ویب ڈیسک  پير 23 اکتوبر 2023
امارات اسلامیہ افغانستان کے کارڈ کے حامل افراد ہی اسلحہ لیکر چل سکتے ہیں، فوٹو: فائل

امارات اسلامیہ افغانستان کے کارڈ کے حامل افراد ہی اسلحہ لیکر چل سکتے ہیں، فوٹو: فائل

کابل: افغانستان میں طالبان حکومت نے ٹی ٹی پی سے تعلق رکھنے والوں کو ہدایت کی ہے کہ عوامی مقامات پر مسلح ہو کر نہ چلیں۔

افغانستان میں طالبان حکومت کے ایک کمانڈر کی ویڈیو وائرل ہورہی ہے جس میں وہ کہہ رہے ہیں کہ آج کے بعد سے کسی کو اسلحہ ساتھ رکھ کر نقل و حرکت کی اجازت نہیں ہوگی۔

طالبان کمانڈر نے مزید کہا کہ امارت اسلامیہ افغانستان کا رسمی کارڈ نہ رکھنے والے آئندہ اسلحہ ساتھ لیکر نہ چلیں۔ آپ لوگ ہمارے ہاں مہاجر ہیں اور ہمارے لیے قابل قدر ہیں لیکن اسلحہ لیکر چلنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔

طالبان کمانڈر نے یہ بھی کہا کہ طالبان سیکیورٹی فورسز سے ملتی جلتی وردیاں (نظامی) پہننے اور گاڑیوں پر کالے شیشے لگانے پر بھی مکمل پابندی ہوگی۔ اس میں ہم سب کی خیر ہوگی۔ امارت اسلامی حاکم اور ہم حفاظت پر مامور ہیں۔

خوست کے طالبان کمانڈر نے مزید کہا کہ اگر امارت اسلامی کے خلاف بات کرنے والا گرفتار ہوا تو پھر اس کا نہ پوچھے۔ اس کے ساتھ ملکی قانون کے تحت سلوک کیا جائے گا۔

ادھر سربراہ انسداد جرائم مولوی محمد صابر نے بتایا کہ خوست میں 30 لاکھ افغانی کی لاگت سے کیمرے لگا رہے ہیں جس سے شہر کے 15 اہم مقامات کی نگرانی کی جائے گی۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔