سونے سے قبل ان پانچ غذاؤں سے اجتناب کریں

ویب ڈیسک  جمعـء 27 اکتوبر 2023

غذا، صحت اور نیند آپس میں بہت گہرا تعلق رکھتی ہیں۔ اس لیے غذا میں معمولی سی خرابی نیند اور صحت دونوں پر شدید منفی اثرات مرتب کرسکتی ہے۔

ماہرین کی جانب سے پانچ ایسی غذاؤں کی نشاندہی کی گئی ہے جن کا سونے سے قبل کھایا جانا صحت پر انتہائی مضر اثرات مرتب کر سکتا ہے۔

وہ غذائیں درج ذیل ہیں:

چاکلیٹ

کیفین سے بھرپور چاکلیٹ کو رات کے وقت کھانا انتہائی نقصان دہ ہوسکتا ہے۔ ریپڈ آئی موومنٹ کا سبب بننے والی کیفین، صبح نیند سے بیدار ہونے کے بعد آپ کے لیے مزید تھکن کی وجہ ہوسکتی ہے۔ سونے سے قبل چاکلیٹ کے علاوہ کیفین کی حامل دیگر اشیاء جیسے کہ کافی، چائے اور انرجی مشروبات سے بھی اجتناب کیا جانا چاہیے۔

خشک میوہ جات

فائبر کے حامل خشک میوہ جات کی اعتدال کے ساتھ کھپت انتہائی مفید ہوتی ہے لیکن رات کے وقت ان کا کھایا جانا پیٹ میں درد اور گیس کی کیفیت میں مبتلا کر سکتا ہے۔

پنیر

سونے سے قبل پنیر کھانا طبیعت کے لیے انتہائی بدتر ثابت ہوسکتا ہے۔ متعدد اقسام کے تیز اور پُرانے پنیروں میں امائنو ایسڈ پائے جاتے ہیں جو ہمیں جاگتا اور چوکنا رکھتے ہیں۔

میٹھی غذائیں

آئس کریم، کیک اور مٹھائی جیسی میٹھی غذائیں خون میں شوگر کی مقدار میں ایک دم اضافہ کرتی ہیں۔ یہ فوری اضافہ ایڈرینل کو ایمرجنسی کا اشارہ دے کر چوکنا کرتا ہے جس کے نتیجے میں کورٹیسول کی مقدار میں اضافہ ہوجاتا ہے اور جسم کو نیند سے جگا دیتا ہے۔

ٹماٹر

سونے سے قبل ٹماٹر جیسی تیزابی غذاؤں سے بھی اجتناب کرنا چاہیئے۔ یہ غذائیں لیٹتے وقت ریفلکس مسائل (معدے کے تیزابی مواد کا بار بار حلق میں آنا) کا سبب ہوسکتی ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔