پی ٹی آئی نے ایک مرتبہ پھر الیکشن کمیشن کو چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا

ویب ڈیسک  بدھ 8 نومبر 2023
(فوٹو: فائل)

(فوٹو: فائل)

 اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف نے انتخابات کے آزادانہ، منصفانہ اور شفاف انتخابات کا معاملہ اٹھاتے ہوئے 24 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ پھر سے الیکشن کمیشن کو ارسال کردیا۔ 

چارٹر آف ڈیمانڈ مرکزی سیکرٹری جنرل عمر ایوب خان کی جانب سے ارسال کیا گیا جس میں انہوں نے کہا کہ 11 اکتوبر کو الیکشن کمیشن اور تحریک انصاف کے وفد کےدرمیان انتخابی ضابطہ اخلاق پر مشاورت کے حوالے سے ملاقات کی گئی، تحریک انصاف کے بیرسٹر گوہر علی،ڈاکٹر بابر اعوان ،سینیٹر علی ظفر پر مشتمل وفد نے الیکشن کمیشن سے ملاقات کی۔

عمر ایوب نے کہا کہ ملاقات میں تحریک انصاف کے وفد کی جانب سے شفاف اور منصفانہ انتخاب کے انعقاد کیلئے باضابطہ طور پر چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کیا گیا، گزشتہ ملاقات کے بعد ہونے والی حالیہ پیش رفت کے تناظر میں یہ چارٹر آف ڈیمانڈ الیکشن کمیشن کی توجہ دلانے کیلئے ایک بار پھر پیش کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے چارٹر آف ڈیمانڈ میں واضح کیا کہ آئندہ عام انتخابات کے تناظر میں تحریک انصاف کو مسلسل لیول پلیئنگ فیلڈ سے محروم رکھا جا رہا ہے، الیکشن کمیشن اپنی آئینی ذمہ داری پوری کرتے ہوئے 90 روز کی مدت کے اندر انتخاب کے انعقاد کا شیڈول جاری کرے۔

عمران ایوب نے کہا کہ تحریک انصاف اراکین کو غیر قانونی گرفتاریوں اور جبری گمشدگیوں جیسے اقدامات کے ذریعے مسلسل سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، سابق وزیراعظم اور چیئرمین عمران خان اس وقت ایک بے بنیاد اور من گھڑت مقدمے میں پابند سلاسل ہیں، تحریک انصاف کے جھنڈوں سے لے کر پارٹی کا موقف میڈیا پر نشر کرنے پر بھی مکمل پابندی عائد ہے۔

انہوں نے چارٹر آف ڈیمانڈ میں واضح کیا کہ یہ معاملہ نہ صرف تحریک انصاف بلکہ پاکستان کی جمہوریت کیلئے بھی انتہائی سنگین اور تشویش کا باعث ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔