’’ٹائم آؤٹ‘‘ پر وکٹ؛ بنگلادیش ہائیکورٹ نے بورڈ سے جواب طلب کرلیا

ویب ڈیسک  بدھ 8 نومبر 2023
 (فوٹو: کرک انفو)

(فوٹو: کرک انفو)

ڈھاکہ: بنگلادیش ہائیکورٹ نے پاکستان کے سابق پاکستانی کرکٹر وقار یونس کی شکیب الحسن پر تنقید کے حوالے سے کرکٹ بورڈ سے جواب طلب کرلیا۔

وقار یونس نے سری لنکا کے خلاف ورلڈ کپ میچ میں اینجلو میتھیوز کو کرکٹ کی 146 سالہ تاریخ میں پہلی بار متنازع طور پر ’’ٹائم آؤٹ‘‘ کروانے پر بنگلا دیشی کپتان شکیب الحسن پر تنقید کی تھی۔

بنگلادیش کی قومی خبررساں ایجنسی کے مطابق عدالت نے کہا ہے کہ بورڈ حکام کو ورلڈ کپ کمنٹیٹرز کی فہرست سے وقار یونس کو نکلوانے کیلئے انکے خلاف آئی سی سی میں شکایت درج نہ کرنے کی وضاحت کرنی ہوگی۔

مزید پڑھیں: ورلڈکپ؛ میتھیوز نے ’’ٹائم آؤٹ‘‘ پر وکٹ گنوانے کے بعد ویڈیو ثبوت پیش کردیا

بنگلادیش ہائی کورٹ نے کرکٹ بورڈ سے کہا کہ وہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل میں وقار یونس کیخلاف شکایت درج کیوں نہیں کراتے؟۔ عدالت نے بنگلادیش کرکٹ بورڈ کے صدر کو جواب کے لئے 10 دن کی مہلت دے دی۔

مزید پڑھیں: کبھی کسی ٹیم کو اتنا نیچے گرتا نہیں دیکھا، میتھیوز پریس کانفرنس کے دوران چراغ پا

بنگلادیش ہائی کورٹ کے جسٹس مصطفی زمان اسلام اور جسٹس محمد عطاء اللہ کی بنچ نے اس معاملے سے متعلق سپریم کورٹ کے ایڈووکیٹ ولی الرحمان خان کی جانب سے دائر درخواست کی ابتدائی سماعت کے بعد یہ فیصلہ سنایا۔

مزید پڑھیں: ’’ٹائم آؤٹ‘‘ پر میتھیوز کی وکٹ؛ شکیب الحسن کا بیان سامنے آگیا

واضح رہے کہ پیر کو بنگلا دیش اور سری لنکا کے درمیان ورلڈ کپ میچ کے دوران وقار یونس اور سابق سری لنکن کرکٹر رسل آرنلڈ نے کمنٹری باکس میں شکیب الحسن کے اس اقدام پر تنقید کی اور اسے اسپورٹس مین شپ کے خلاف قرار دیا تھا۔

مزید پڑھیں: کیا ’’ٹائم آؤٹ‘‘ پر وکٹ گنوانے والے میتھیوز نے فیصلہ واپس لینے کی اپیل کی تھی!

وقار یونس نے شکیب الحسن کے اس عمل پر سوال اٹھایا اور بنگلادیش ٹیم کے طرز عمل پر ناپسندیدگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ کرکٹ کی روح کے خلاف ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔