کراچی سے بین الصوبائی منشیات اسمگلر گرفتار، 50 لاکھ سے زائد کی آئس برآمد

اسٹاف رپورٹر  منگل 14 نومبر 2023
(فوٹو: فائل)

(فوٹو: فائل)

  کراچی: شہر قائد میں پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے بین الصوبائی منشیات اسمگلنگ میں ملوث گروہ کے دو کارندوں کو گرفتار کر کے پچاس لاکھ روپے مالیت کی آئس برآمد کرلی۔

تفصیلات کے مطابق سکھن پولیس ایک کارروائی میں دو ملزمان کو گرفتار کیا جن کے قبضے سے اعلیٰ کوالٹی کی آئس برآمد ہوئی جس کی مالیت پچاس لاکھ روپے سے زائد بتائی جارہی ہے۔

ایس ایس پی ملیر طارق مستوئی کے خصوصی احکامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے سکھن تھانے کے ایس ایچ او زبیر نواز نے پولیس پارٹی کے ہمراہ کامیاب کارروائی کرتے ہوئے بدنام منشیات اسمگلر گروہ کے دو اہم کارندوں کو گرفتار کرلیا۔ ملزمان میں محمد رفیق بروہی ولد فضل محمد اور خالد حسین عباسی ولد نورحسین شامل ہیں-

ملزمان کو ریڑھی گوٹھ کے علاقےآئی سی ای کے قریب جیٹی سے گرفتار کیا گیا۔ ملزمان کے قبضے سے اعلیٰ کوالٹی کی 745 گرام آئس برآمد کی گئی جسکی مالیت 50 لاکھ روپے سے زائد ہے۔

ایس ایچ او سکھن زبیر نواز کے مطابق ملزمان نے ابتدائی طور پر انکشاف کیا ہے کہ انکا تعلق منشیات اسمگلرز کے بین الصوبائی گروہ سے ہے، ملزمان بلوچستان سے بائی روڈ آئس اور دیگر منشیات ریڑھی گوٹھ لائے تھے اور بعد ازاں لانچ کے ذریعے سمندری راستے مذکورہ آئس ضلع ٹھٹھہ، کیٹی بندر لے جانا چاہتے تھے۔

مذکورہ منشیات کیٹی بندر میں منشیات فروش گروہ کے حوالے کرکے بائی روڈ واپس بلوچستان جانے کا ارادہ رکھتے تھے کہ پولیس نے گرفتار نے گرفتار کرلیا۔

مذکوره گروه کے دیگر ساتھی منشیات افغانستان سے چمن باڈر کے راستے پاکستان لاتے تھے جو بلوچستان اور بعد ازاں سندھ سمیت دیگر صوبوں میں سیلائی کی جاتی ہے۔

ملزمان کے مطابق وہ گذشتہ دو سال سے مذکورہ گھناؤنا دھندہ کررہے تھے اور پہلی بار گرفتار ہوئے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔