قومی کرکٹرز کی شکایت؛ رشوت لینے والے سندھ پولیس کے 4 اہلکار گرفتار

ویب ڈیسک  منگل 28 نومبر 2023
ایس ایچ او سکرنڈ اور منشی کو غفلت و لاپروائی کے مرتکب قرار دیکر معطل کردیا (فوٹو: ایکسپریس ویب)

ایس ایچ او سکرنڈ اور منشی کو غفلت و لاپروائی کے مرتکب قرار دیکر معطل کردیا (فوٹو: ایکسپریس ویب)

قومی کرکٹرز صہیب مقصود اور عامر یامین سے رشوت وصول کرنے والے 4 پولیس اہلکاروں کو گرفتار کرلیا گیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق شہید بینظیر آباد میں سکرنڈ تھانے کی حدود سپرہائی وے پر قومی کرکٹرز سے رشوت وصول کرنے والے 4 پولیس اہلکاروں کو گرفتار کرلیا گیا، چاروں پولیس اہلکار سکرنڈ تھانے میں تعینات تھے۔

ڈی آئی جی ضلع شہید بینظیر آباد ایس ایچ او سکرنڈ اور منشی کو بھی غفلت و لاپروائی کا مرتکب قرار دیکر معطل کردیا گیا ہے، آئی جی سندھ رفعت مختیار راجہ نے کراچی سے ملتان جانے والے قومی کرکٹرز صہیب مقصود اور عامر یامین سے رشوت طلب کرنے کا واقعہ کانوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی شہید بے نظیرآباد کو فوری تحقیقات کا حکم دیا تھا اور واقعے میں ملوث اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی ہدایت کی تھی۔

مزید پڑھیں: قومی کرکٹرز نے سندھ پولیس کی رشوت خوری کا خلاصہ کردیا

ڈی آئی جی شہید بینظیرآباد پرویز چانڈیو نے فوری انکوائری رپورٹ ترتیب دیتے ہوئے رشوت ستانی میں ملوث سکرنڈ تھانے کے 4 پولیس اہلکار ملوث پائے گئے ان کو باقاعدہ گرفتار کرکے ان کے خلاف ایف آئی آر درج کرکے قانونی کاروائی کی جارہی ہے۔

دوسری جانب واقعے کی انکوائری رپورٹ آئی جی سندھ کو ارسال کی جارہی ہے۔

واضح رہے کہ قومی کرکٹرز نے سندھ پولیس کی رشوت خوری کا خلاصہ سوشل میڈیا پر کیا تھا، جس کے بعد سندھ حکومت اور پولیس حرکت میں آئی۔

ٹوئٹ میں کرکٹر کا کہنا تھا کہ سندھ پولیس اتنی کرپٹ ہے کہ ہر 50 کلومیٹر کے بعد آپ کو روکتی ہے اور پیسے مانگتی ہے، ہمارے بتانے کے باوجود اہلکاروں نے 8 ہزار روپے رشوت لی اور پھر جانے دیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔