ٹک ٹاکر کو چوری اور قتل کے جرم میں سزائے موت

ویب ڈیسک  جمعرات 30 نومبر 2023
گزشتہ سال مئی میں ٹک ٹاکر محمدنیاز عرف عالیان نے 28 سالہ خرم اکبر کو قتل کیا اور گاڑی چھین کر فرار ہوگیا۔

گزشتہ سال مئی میں ٹک ٹاکر محمدنیاز عرف عالیان نے 28 سالہ خرم اکبر کو قتل کیا اور گاڑی چھین کر فرار ہوگیا۔

 اسلام آباد: ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹس اسلام آباد نے ٹک ٹاکر کو چوری، قتل کے جرم میں سزائے موت سنا دی۔

ایڈیشنل سیشن جج طاہرعباس سِپرا نے ٹک ٹاکر عالیان کو سزائے موت کا حکم دےدیا۔

گزشتہ سال مئی میں ٹک ٹاکر محمدنیاز عرف عالیان نے مدعی مقدمہ کے بیٹے 28 سالہ خرم اکبر کو قتل کیا اور اس سے گاڑی چھین کر فرار ہوگیا۔ مقتول خرم اکبر رات گئے گجرانوالہ سے اسلام آباد کی طرف آرہا تھا۔

جج طاہرعباس سِپرا نے فیصلے میں کہا کہ مجرم عالیان سے تیس بور پستول بھی برآمد ہوچکی، اس نے آلہ قتل کو جائے وقوعہ کے قریب جھاڑیوں میں پھینک دیاتھا۔ مجرم عالیان نے جائے وقوعہ کی خود نشاندہی کی۔

فیصلے میں کہا گیا کہ مجرم عالیان کے مطابق قتل کے وقت میں پشاور میں موجود تھا لیکن اس کے بیان کا کوئی گواہ نہیں۔ اس کے استعمال میں تیس بور پستول کا فارنزک میچ ہوا۔ مجرم عالیان کی گواہان نے شناخت بھی کی۔ ثبوتوں، گواہان کی روشنی میں مجرم عالیان قتل اور چوری کا مرتکب ہوا۔

جج طاہرعباس سِپرا نے فیصلے میں کہا کہ مجرم عالیان کو سزائے موت، پانچ لاکھ روپے جرمانے کی سزا، چوری کے جرم میں 7 سال قید اور تیس ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی جاتی ہے۔

مئی 2022 میں مجرم عالیان کے خلاف تھانہ گولڑہ میں قتل، چوری کے الزام میں مقدمہ درج کیاگیاتھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔