70 سالہ خاتون کے ہاں 2 جڑواں بچوں کی پیدائش

ویب ڈیسک  منگل 5 دسمبر 2023
[فائل-فوٹو]

[فائل-فوٹو]

کمپالا: سفینہ ناموکوا نامی ایک 70 سالہ یوگنڈا کی خاتون نے توقعات کے برخلاف اِن  وٹرو فرٹیلائزیشن طریقے کے ذریعے جڑواں بچوں کو جنم دیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق آئی وی ایف علاج کے ذریعے کامیابی سے جڑواں بچوں کو جنم دینے کے بعد سفینہ ناموکوا دنیا کی معمر ترین ماؤں میں سے ایک بن گئی ہیں۔ جڑواں بچوں میں ایک لڑکا اور ایک لڑکی ہے جو  کمپالا کے ایک اسپتال میں آئی وی ایف طریقہ کار کے بعد سی سیکشن کے ذریعے ڈلیور  ہوئے۔

اس موقع پر اسپتال کے عملے نے انہیں مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یہ ایک طبی کامیابی سے بڑھ کر ہے؛ یہ انسانی  عزم و ہمت کی طاقت اور  مشکلات سے نمٹنے  کے بارے میں ہے۔

خواتین کے اسپتال انٹرنیشنل اینڈ فرٹیلیٹی سنٹر (WHI&FC) کے  ڈاکٹر ایڈورڈ تمل سالی نے  میڈیا نمائندوں کو بتایا کہ ماں نے ان وٹرو فرٹیلائزیشن (IVF) کے طریقہ کار کے لیے عطیہ دینے والے بیضے اور اپنے ساتھی کےنطفے  کا استعمال کیا۔ بچے 31 ہفتوں میں قبل از وقت پیدا ہوئے اور انہیں انکیوبیٹرز میں رکھا گیا ہے جہاں ان کی حالت فی الحال مستحکم ہے۔

” انہوں نے مزید کہا کہ یہ تاریخی واقعہ، ایک بچہ لڑکا اور لڑکی، نہ صرف IVF میں ہماری دو دہائیوں کی قیادت کی نشان دہی کرتا ہے بلکہ ہمیں افریقہ میں سب سے بڑے  فرٹیلیٹی سینٹر کے طور پر بھی منفرد بناتا ہے ۔

واضح رہے کہ تین سالوں میں سفینہ کی یہ دوسری ڈیلیوری ہے۔ انہوں نے اس سے قبل 2020 میں ایک بچی کو جنم دیا تھا۔ خاتون نے بتایا کہ وہ بے اولاد ہونے کا مذاق اڑائے جانے  کے بعد بچے پیدا کرنا چاہتی تھیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔