غزہ میں حماس کی جگہ لینے کیلیے فلسطین اتھارٹی کو منا رہے ہیں، برطانیہ

ویب ڈیسک  جمعـء 8 دسمبر 2023
غزہ میں وہی حکومت قابل قبول ہوگی جسے عوام اپنا حکمراں بنانا چاہیں، حماس (فوٹو: فائل)

غزہ میں وہی حکومت قابل قبول ہوگی جسے عوام اپنا حکمراں بنانا چاہیں، حماس (فوٹو: فائل)

غزہ: برطانوی وزیر دفاع گرانٹ شیپس نے کہا ہے کہ غزہ میں حماس کی جگہ حکومت سنبھالنے کے لیے فلسطین اتھاٹی کو راضی کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جس سے مشرق وسطیٰ میں امن بحالی میں مدد ملے گی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق برطانوی وزیر دفاع گرانٹ شیپس فلسطین کے دورے کے دوران مغربی کنارے پہنچے اور امدادی کاموں میں مصروف برطانوی فوجیوں سے بھی ملاقات کی۔

اس ملاقات کے دوران برطانوی وزیر دفاع گرانٹ شیپس نے کہا کہ فلسطینی اتھارٹی کو غزہ کی حکومت سنبھالنے کے لیے تیار کر رہے ہیں۔ اگر ایسا ہوجاتا ہے تو فلسطین تنازع کا مستقل حل نکل آئے گا۔

یہ خبر پڑھیں : غزہ؛ حماس سے لڑائی میں اسرائیل کے سابق آرمی چیف کا بیٹا ہلاک

برطانوی وزیر دفاع نے جنگ زدہ غزہ میں امدادی سامان کی ناکافی ترسیل پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ امدادی کارکنوں کو کھل کر کام کرنے اور امدادی سامان کی تقسیم میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جائے۔

خیال ہے کہ یہ پہلی بار نہیں کہ غزہ میں حماس کی جگہ فلسطین اتھارٹی کے حکومت سنبھالنے کی بات کی گئی ہو۔ اس سے قبل امریکا اور اسرائیل بھی یہی عندیہ دے چکے ہیں تاہم فلسطین اتھارٹی کا مؤقف سامنے نہیں آیا۔

یہ خبر بھی پڑھیں : مغوی فلسطینی شہریوں کیساتھ اسرائیلی فوج کا دردناک سلوک، ویڈیو وائرل 

دوسری جانب حماس نے ان خبروں پر ردعمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ غزہ میں حکومت اس کی ہوگی جسے وہاں کے عوام اپنا حکمراں بنانا چاہیں گے۔ کسی بھی غیر جمہوری عمل کو قبول نہیں کیا جائے گا۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔