ایسا سیارہ جہاں پہنچتے ہی آپ کے پرخچے اُڑ جائیں گے

ویب ڈیسک  جمعـء 15 دسمبر 2023
[فائل-فوٹو]

[فائل-فوٹو]

  واشنگٹن: اگر کہا جائے کہ ہماری کہکشاں میں سب سے زیادہ خوفناک سیارہ HD 189733 b ہوسکتا ہے تو شاید یہ غلط نہ ہو۔

ناسا کے ماہرینِ فلکیات کے نزدیک یہ سیارہ ’قاتل سیاروں‘ میں سے ایک ہے۔ انسانی آنکھ کو یہ دور دراز سیارہ چمک دار نیلا دکھائی دیتا ہے لیکن اگر کوئی بھی ’خلائی مسافر‘ اسے زمین ہی جیسا ماحول دوست سیارہ سمجھ کر اس پر اترنے کی کوشش کرے تو یہ اس کی زندگی کی سب سے بڑی اور آخری غلطی ہوگی۔

ایچ ڈی 189733 بی کا موسم جان لیوا ہے۔ اس کی ہوائیں آواز کی رفتار سے 7 گنا زیادہ 5,400 میل فی گھنٹے کی رفتار سے چلتی ہیں۔ لیکن اس سے قطع نظر جو بات اسے سب سے زیادہ خوفناک بناتی ہے وہ ہے یہاں کی بارش جو پانی کی بوندوں کے بجائے کانچ کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑوں پر مشتمل ہے۔

ایسی بارش کی زد میں آنا سیدھی موت ہے جس آپ کو اس کا احساس بھی نہیں ہوگا۔ مزید برآں کانچ کی یہ بارش تیز ہواؤں کے ساتھ ٹیڑھی سمت میں ہوتی ہے۔ یعنی لاکھوں چھوٹے شیشے کے ٹکڑے آواز سے زیادہ رفتار سے ٹیڑھی سمت میں اڑتے ہیں۔

اس سیارے کا کوبالٹ کا نیلا رنگ جو خلا سے کسی سمندر کی طرح دکھتا ہے، دراصل سیارے کے ماحول میں موجود سلیکیٹ کے ذرات سے بنے بادل ہیں جو ہمہ وقت طوفانی صورت اختیار کیے ہوئے ہوتے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔