چین کی سمندری حدود پر فلپائن کو سنگین نتائج کی دھمکی

ویب ڈیسک  جمعرات 21 دسمبر 2023
فلپائن چین کے دشمنوں کی باتوں میں آکر غلط اندازے نہ لگائے، وزیر خارجہ وانگ ایی

فلپائن چین کے دشمنوں کی باتوں میں آکر غلط اندازے نہ لگائے، وزیر خارجہ وانگ ایی

بیجنگ: چین نے فلپائن کو خبردار کیا ہے کہ وہ جنوبی بحیرہ میں صورتحال کا ’غلط اندازہ‘ نہ لگائے اور بیرونی عناصر کی باتوں میں آکر کچھ ایسا نہ کرے جس کا خمیازہ صرف اسے بھگتنا پڑے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کی جانب سے یہ دھمکی وزیر خارجہ وانگ ایی نے اپنے فلپائنی ہم منصب کو ٹیلی فون پر دی۔

چین کے وزیر خارجہ وانگ ایی نے فلپائنی ہم منصب سے کہا کہ پڑوسی ہونے کی وجہ سے ہمیں پیدا ہونے والے کسی بھی تنازع پر آپس میں بات کرلینی چاہیے اور میں سمجھتا ہوں کہ اس وقت موجودہ سمندری صورتحال کو سنبھالنا سب سے ضروری کام ہے۔

چینی وزیر خارجہ نے اپنے فلپائنی ہم منصب کو خبردار کیا کہ اگر آپ نے سمندری حدود سے متعلق صورتحال کا غلط اندازہ لگایا یا غیر ارادی طور پر بیرونی قوتوں سے ملی بھگت کی تو چین اپنے دفاع میں بھرپور جواب دے گا۔

وانگ ایی نے مزید کہا کہ چین اور فلپائن کے درمیان دوطرفہ تعلقات میں سنگین مشکلات فلپائن کے پالیسی کو تبدیل کرنے اور وعدوں سے مکرنے کی وجہ سے آئیں۔

چین کے وزیر خارجہ نے فلپائن کو جلد از جلد پالیسی کو تبدیل کرکے “صحیح راستے پر واپس آنے” کا مشورہ بھی دیا۔

اس حوالے سے فلپائن کا مؤقف سامنے نہیں آیا۔

یاد رہے کہ چین اور تائیوان کا سمندر حدود کے حوالے سے تنازع کافی پرانا ہے۔ امریکا سمیت یورپی ممالک تائیوان کی ملکیت کو درست سمجھتے ہیں جب کہ روس چین کے ساتھ ہے اور فلپائن کا جھکاؤ بھی اب امریکا کی وجہ سے تائیواں کی جانب ہوتا جا رہا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔