یوکرین کے جنگی قیدیوں کو لانے والا روس کا فوجی طیارہ گرکر تباہ؛ 74 ہلاک

ویب ڈیسک  بدھ 24 جنوری 2024
طیارے کو یوکرین نے خود نشانہ بنایا اور اپنے ہی فوجیوں کو مار ڈالا، روسی رکن پارلیمنٹ، فوٹو: ٹوئٹر

طیارے کو یوکرین نے خود نشانہ بنایا اور اپنے ہی فوجیوں کو مار ڈالا، روسی رکن پارلیمنٹ، فوٹو: ٹوئٹر

 ماسکو: روس کا یوکرین کے 65 جنگی قیدیوں کو لے کر جانے والا طیارہ گر کر تباہ ہوگیا جس کے نتیجے میں جہاز میں سوار تمام افراد ہلاک ہوگئے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق روس کا ملٹری ٹرانسپورٹ طیارہ یوکرین سے واپسی پر بیلگوروڈ میں گر کر تباہ ہو گیا اور اس میں آگ بھڑک اُٹھی۔ طیارہ کسی امداد ملنے سے پہلے مکمل طور پر جل کر راکھ کا ڈھیر بن گیا۔

اس طیارے میں یوکرین کے 65 جنگی قیدیوں کو روسی قیدیوں سے تبادلے کے لیے لایا جا رہا تھا جب کہ طیارے میں عملے کے بھی 5 ارکان اور 3 روسی فوجی بھی موجود تھے۔ تمام افراد حادثے میں ہلاک ہوگئے۔

حادثے کی ایک ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ طیارہ تیزی سے عمودی طور پر نیچائی کی جانب جا رہا ہے اور رہائشی علاقے میں زمین پر جا گرتا ہے۔

ادھر روس کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ویاچسلاو ولوڈن نے یوکرین پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ جنگی قیدیوں کو لے جانے والے مسافر طیارے کو مار گرایا ہے۔ یوکرین نے اپنے ہی فوجیوں کو ہوا میں گولی مار دی۔

دوسری جانب اے ایف پی نے یوکرین کے مقامی میڈیا کے حوالے سے بتایا کہ ان کی دفاعی فورسز نے روسی طیارے کو مار گرایا ہے کیونکہ یہ طیارہ S-300 زمینی فضائی دفاعی نظام کے لیے میزائل لے جا رہا تھا۔

یاد رہے کہ روس کا  IL-76 طیارہ فوجیوں، کارگو اور فوجی ساز و سامان جیسے ٹینک، ہووٹزر اور گولہ بارود کو لے جانے کے لیے ڈیزائن کیا گیا تھا۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔