جنوبی سوڈان میں زمین کے تنازع پر جھگڑا؛ 38 افراد ہلاک اور 52 زخمی

ویب ڈیسک  جمعـء 2 فروری 2024
ریاست لیکس کے کسانوں کا جھگڑا ریاست وارپ کے چرواہوں سے ہوا تھا، فوٹو: فائل

ریاست لیکس کے کسانوں کا جھگڑا ریاست وارپ کے چرواہوں سے ہوا تھا، فوٹو: فائل

خرطوم: سوڈان کے جنوبی علاقے میں زمین کی ملکیت کے تنازع پر ہونے والے جھگڑے میں 38 افراد ہلاک اور 52 زخمی ہوگئے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق سوڈان کی ریاست لیکس کے رہائشی نوجوانوں کا جھگڑا ریاست وارپ کے چرواہوں سے ہوا جو اپنے مویشیوں کے ساتھ چراہ گاہ اور پانی کی تلاش میں کھیتوں میں داخل ہوگئے تھے۔

جس پر تلخ کلامی کے بعد بعد جھگڑا بڑھ گیا اور دونوں جانب سے کی جانے والی فائرنگ میں 38 افراد ہلاک اور 52 زخمی ہوگئے۔

ہلاک ہونے والوں میں لیکس ریاست کے 19 اور واراپ کے بھی 19 باشندے شامل ہیں جب کہ زخمیوں میں الیکس کے 19 اور واراپ کے 17 شہری شامل تھے۔

یاد رہے کہ چار روز قبل بھی تیل کی دولت سے مالا مال علاقے میں پیدا ہونے والے زمینی تنازع پر 52 افراد ہلاک اور 64 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

وارپ ریاست کے وزیر اطلاعات ولیم وول میوم نے بتایا کہ لڑائی ریاست لیکس اور وارپ کی سرحد پر الور کے علاقے میں ہوئی تاہم اب حالات کنٹرول میں ہیں۔

واضح رہے کہ جنوبی سوڈان نے 39 سالہ جنگ کے بعد 2011 میں سوڈان سے آزادی حاصل کی تاہم 2013 سے 2018 تک ایک تباہ کن اندرونی تنازع میں ڈوبا رہا تھا اور اب بھی کئی علاقے میں مسلح جھڑپیں جاری ہیں۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔