مودی سرکار کی تجاویز مسترد؛ کسانوں کا احتجاج جاری رکھنے کا اعلان

ویب ڈیسک  منگل 20 فروری 2024
مودی سرکار کے پاس کسانوں کے لیے کوئی بہترین فارمولا موجود نہیں، کسان رہنما

مودی سرکار کے پاس کسانوں کے لیے کوئی بہترین فارمولا موجود نہیں، کسان رہنما

نئی دہلی: بھارت بھر سے مودی سرکار کی دہقان دشمن پالیسی کے خلاف احتجاج کرنے دہلی پہنچنے والے ہزاروں کسانوں نے حکومتی تجاویز مسترد کر کے احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کردیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق کسان رہنماؤں نے مطالبات کی منظوری تک احتجاج مؤخر کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کل سے احتجاج دوبارہ شروع ہوجائے گا۔

مودی سرکار نے ملک بھر سے دہلی پہنچنے والے کسانوں کو احتجاج سے روکنے کے لیے مذکارات کا جھانسا دیا تھا اور اپنی پرانی تجاویز ہی سامنے رکھیں جسے کسان رہنماؤں نے مسترد کردیا۔

کسان رہنما سرون سنگھ پنڈھر نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ حکومت نے مکئی، کپاس اور تین مختلف دالوں کی کم از کم قیمت کا 5 سالہ منصوبہ پیش کیا جو ہمارے لیے قابل قبول نہیں۔

سرون سنگھ پنڈھر نے کہا کہ حکومت نے ہمارے حوصلوں اور عزم کو تھکانے کے لیے مذکرات کے نام پر تاخیری حربے استعمال کیے لیکن ہم مودی سرکار کے کسی جھانسے میں نہیں آئیں گے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔