بشریٰ بی بی کی جان کو شدید خطرات لاحق ہیں، پی ٹی آئی وکلاء

ویب ڈیسک  جمعرات 22 فروری 2024
پی ٹی آئی وکلاء نے بنی گالہ سب جیل میں بشریٰ بی بی سے ملاقات کی : فوٹو : فائل

پی ٹی آئی وکلاء نے بنی گالہ سب جیل میں بشریٰ بی بی سے ملاقات کی : فوٹو : فائل

 اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے وکلاء کا کہنا ہے کہ عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کی تیز مرچ کے کھانے سے طبیعت خراب ہوگئی اور منہ میں چھالے پڑگئے ہیں۔

پی ٹی آئی کے وکلاء مشعل یوسفزئی اور نعیم حیدر پنجھوتہ نے بنی گالہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بشریٰ بی بی سے بنی گالہ سب جیل میں ملاقات ہوئی، بشریٰ بی بی کی صحت ٹھیک نہیں ہے، بشریٰ بی بی کو کھانا دینے کے بعد ان کا بلڈ پریشر چیک کیا جاتا ہے، بشریٰ بی بی کی صحت کے حوالے سے شدید تحفظات ہیں۔

نعیم حیدر پنجھوتہ نے کہا کہ بشریٰ بی بی سے آدھا گھنٹہ ملاقات جاری رہی ہے، پہلے دن بشریٰ بی بی کا روزہ تھا جو کھانا دیا گیا اس میں تیز مرچ تھی، بشریٰ بی بی نے بتایا کہ مرچوں سے ان کی طبیعت خراب ہوتی ہے، صبح اٹھنے کے بعد ان کے گلے میں چھالے تھے جس کی وجہ سے وہ ناشتہ نہیں کر پائیں۔

مزید پڑھیں: بشریٰ بی بی کو اڈیالہ جیل منتقل کرنے سے انتظامیہ کا انکار

پی ٹی آئی کے وکیل نعیم حیدر پنجھوتہ نے مزید کہا کہ بشریٰ بی بی کا بلڈ پریشر چیک کرنے کے لیے جو مشین دی گئی وہ خراب تھی، ہائیکورٹ نے بھی میڈیکل رپورٹ پر تحفظات کا اظہار کیا، بشریٰ بی بی کی جان کو شدید خطرات لاحق ہیں، بشریٰ بی بی کو پانی میں بھی ذائقہ نہیں آتا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔