برطانیہ میں زمینی گڑھے سے 1700 سال پرانا صحیح سالم انڈہ دریافت

ویب ڈیسک  پير 26 فروری 2024
[فائل-فوٹو]

[فائل-فوٹو]

بکنگھم شائر: حال ہی میں ماہرین آثار قدیمہ نے برطانیہ میں 1700 سال پرانا مکمل طور پر سالِم انڈا دریافت کیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق برطانوی خطے بکنگھم شائر میں ماہرینِ آثار قدیمہ نے ایسی دریافت کی ہے جو دنیا نے پہلے کبھی نہیں دیکھی، ایک محفوظ شدہ حالت میں سالمِ انڈہ جو کم از کم 1,700 سال پرانا ہے۔

ماہرین کے مطابق یہ انڈا دنیا کا سب سے قدیم غیر ارادی طور پر محفوظ کیا گیا انڈا ہے۔ محققین اس وقت مزید حیران رہ گئے جب انہوں نے یہ بھی پایا کہ انڈہ اب بھی اپنے اصل مائع (liquid) سے بھرا ہوا ہے۔

آکسفورڈ آرکیالوجی کے سینئر پراجیکٹ مینیجر ایڈورڈ بڈولف نے کہا کہ انڈے میں اب بھی اسکے مائع کا برقرار رہنا بالکل ناقابل یقین ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جب ہم نے انڈہ دریافت کیا تو ہم نے توقع کی تھی انڈے کا سارا مائع باہرنکل چکا ہوگا لیکن ایسا نہیں تھا۔

انڈہ پانی سے بھرے ایک بڑے گڑھے میں پایا گیا تھا جسے رومیوں نے تیار کیا تھا۔ گڑھے کو اصل میں شراب بنانے بنانے کے لیے استعمال کیا جاتا تھا پھر اسے قربان گاہ کیلئے مختص کردیا گیا۔

گڑھے میں اس کے علاوہ ایک ٹوکری، مٹی کے برتن، سکے، چمڑے کے جوتے، جانوروں کی ہڈیاں اور دیگر انڈوں کے خول بھی پائے گئے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔