بالی ووڈ میں طویل عرصے تک بدسلوکی کا سامنا کرنا پڑا، شاہد کپور

ویب ڈیسک  جمعرات 29 فروری 2024
فوٹو : فائل

فوٹو : فائل

 ممبئی: بالی ووڈ کے معروف اداکار شاہد کپور نے کہا ہے کہ اُنہوں نے بالی ووڈ میں طویل عرصے تک بدسلوکی کا سامنا کیا کیونکہ یہاں نئے لوگوں کو جلد قبول نہیں کیا جاتا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق حال ہی میں شاہد کپور نے بالی وڈ اداکارہ نیہا دھوپیا کے مقبول شو ‘نو فلٹر نیہا’ میں بطورِ مہمان شرکت کی، جہاں انہوں نے بتایا کہ کس طرح بالی ووڈ فلم انڈسٹری باہر کے لوگوں کو آسانی سے قبول نہیں کرتی۔

اداکار پنکج کپور کے بیٹے شاہد کپور نے کہا کہ میں ایک اداکار کا بیٹا ہوں لیکن اس کے باوجود مجھے بالی ووڈ میں ‘آؤٹ سائیڈر’ سمجھا گیا کیونکہ میں دہلی سے ممبئی آیا تھا، میرے ساتھ بدسلوکی کی گئی۔

شاہد کپور نے کہا کہ جب میں نے بالی ووڈ انڈسٹری میں قدم رکھا تو مجھے سمجھ آیا کہ یہاں باہر والے لوگوں کو آسانی سے قبول نہیں کیا جاتا، جب کوئی نیا اداکار بالی ووڈ میں شامل ہوتا ہے تو اس انڈسٹری کے لوگوں کو بڑا مسئلہ ہوتا ہے کہ یہ اداکار کیسے بالی ووڈ میں آگیا۔

اداکار نے کہا کہ مجھے یہ چیز پسند نہیں کہ بالی ووڈ میں نئے لوگوں کو نفرت کی نگاہوں سے دیکھا جاتا ہے، بہترین اداکاری کی صلاحیتوں کے باوجود بھی نئے اداکاروں کو مرکزی کردار نہیں دیا جاتا، یہاں تو نئے اداکاروں پر کیریئر کے دروازے ہی بند کردیے جاتے ہیں۔

مزید پڑھیں: شاہد کپور نے سگریٹ نوشی چھوڑنے کی وجہ بتادی

اُنہوں نے کہا کہ میں دہلی سے ممبئی آیا تھا تو مجھے میرے مختلف لہجے اور شہر کی وجہ سے باہر کا آدمی سمجھا تھا، اسی وجہ سے مجھے طویل عرصے تک بالی ووڈ میں بدسلوکی کا سامنا بھی کرنا پڑا۔

شاہد کپور نے مزید کہا کہ میں نے ممبئی میں اُن لوگوں سے دوستی کرنے کی کوشش کی جو مجھے نہیں جانتے تھے، اس طرح میری فلم ‘عشق وشق پیار ویار’ سے پہلے ہی میرے دوستوں کا ایک گروپ بن گیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔