عثمان خواجہ کو بیٹ پر سے امن کی فاختہ کا لوگو ہٹانا پڑگیا، مگر کیوں؟

ویب ڈیسک  ہفتہ 2 مارچ 2024
واقعہ نیوزی لینڈ کیخلاف ٹیسٹ میچ کے 19ویں اوور میں پیش آیا (فوٹو: ایکسپریس ویب)

واقعہ نیوزی لینڈ کیخلاف ٹیسٹ میچ کے 19ویں اوور میں پیش آیا (فوٹو: ایکسپریس ویب)

آئی سی سی کے دہرے معیار کا شکار ہونے والے آسٹریلوی اوپنر عثمان خواجہ کو بیٹ پر سے امن کی فاختہ کا لوگو ہٹانا پڑگیا۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز میں آسٹریلیا کی اننگز کے 19 ویں اوور میں عثمان خواجہ نے نئے بیٹ کے لیے پویلین کی طرف اشارہ کیا جس کے بعد 12 ویں کھلاڑی میتھیو رنشا کچھ بیٹ لے کر آئے، جس میں اوپنر نے ایک بیٹ منتخب کیا تو اس پر فاختہ کے نشان والا لوگو موجود تھا۔

عثمان خواجہ نے بیٹ استعمال کرنے سے پہلے اس پر لوگو ہٹایا جس کی تصویر سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہوئی۔

مزید پڑھیں: عثمان خواجہ نے نئی سوشل میڈیا پوسٹ میں آئی سی سی کا دہرا معیار واضح کردیا

قبل ازیں گزشتہ برس پاکستان کیخلاف باکسنگ ڈے ٹیسٹ میں فاختہ کا لوگو (امن کا نشان) لگانے کی درخواست کی تھی جسے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے مسترد کردیا تھا۔

مزید پڑھیں: آئی سی سی کا عثمان خواجہ کو بلے پر ’امن کا نشان‘ لگانے کی اجازت دینے سے انکار

عثمان خواجہ فلسطینی عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنا چاہتے تھے، وہ پرتھ ٹیسٹ میں اپنے جوتوں پر نعرہ بھی لکھنے کے خواہشمند تھے۔

بعدازاں کرکٹ آسٹریلیا نے فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے عثمان خواجہ کو بگ بیش لیگ میں فاختہ کا لوگو لگاکر کھیلنے کی اجازت دیدی تھی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔