اسمبلی کی بالا دستی کی بات کرنے پر گھرپر چھاپہ مارا گیا ، محمود اچکزئی

ویب ڈیسک  پير 4 مارچ 2024
محمود خان اچکزئی کے گھر کے قریب خالی پلاٹ واگزار کروایا گیا،ڈپٹی کمشنر کوئٹہ :فوٹو:فائل

محمود خان اچکزئی کے گھر کے قریب خالی پلاٹ واگزار کروایا گیا،ڈپٹی کمشنر کوئٹہ :فوٹو:فائل

 اسلام آباد: بلاول  بھٹو زرداری سمیت سیاسی رہنماؤں نے محمود اچکزئی کے گھر چھاپے کی مذمت کی ہے۔

پختونخوا ملّی عوامی پارٹی کے سربراہ اور صدارتی امیدوار محمود خان اچکزئی نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ کی بالا دستی کی بات کرنے کی پاداش میں میرے گھر پر چھاپہ مارا گیا۔

بلاول بھٹو زرداری نے قومی اسمبلی میں بات کرتے ہوئے کہا کہ  پختونخوا ملّی عوامی پارٹی کےسربراہ محمود خان اچکزئی کے گھر چھاپے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم اور وزیراعلیٰ محمود اچکزئی کے گھر پر چھاپے کی تحقیقات کروائیں۔ صدارتی الیکشن کو متنازع بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف بیرسٹر گوہر علی خان نے محمود خان اچکزئی کی رہائشگاہ پر چھاپے سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ  صدارتی امیدوار محمود خان اچکزئی کی رہائشگاہ پر چھاپے اور چادر اور چار دیواری کے تقدس کی پامالی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔

ترجمان جے یوآئی نے بھی کہا کہ محمود خان اچکزئی کے گھر پر پولیس چھاپہ افسوسناک اور قابل مذمت ہے۔گزشتہ روز کوئٹہ میں محمود خان اچکزئی کے گھر پر چھاپہ مارا گیا تھا۔

ڈپٹی کمشنر کوئٹہ نے بیان میں کہا کہ محمود خان اچکزئی کی رہائش گاہ کے قریب خالی پلاٹ واگزار کروایا گیا۔ کار سرکار میں مداخلت اور اسسٹنٹ کمشنر پر اسلحہ نکالنے پر ایک شخص کو گرفتار کیا گیا۔ محمود خان اچکزئی نے ڈھائی کنال سرکاری اراضی پر چار دیواری لگا کر قبضہ کررکھا تھا۔  کارروائی اسسٹنٹ کمشنر سٹی کی سربراہی میں پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی جانب سے کی گئی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔