غزہ کے ’مسئلے‘ کو ہمیشہ کیلیے ختم کردو؛ ڈونلڈ ٹرمپ کا اسرائیل کو مشورہ

ویب ڈیسک  جمعرات 7 مارچ 2024
ڈونلڈ ٹرمپ نے حماس کو ہمیشہ کیلیے ختم کرنے کا اشارہ دیا، فوٹو: فائل

ڈونلڈ ٹرمپ نے حماس کو ہمیشہ کیلیے ختم کرنے کا اشارہ دیا، فوٹو: فائل

 واشنگٹن: امریکا کے سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے حماس کا نام لیے بغیر اسرائیل کو مشورہ دیا ہے کہ غزہ میں اس مسئلے کو ہمیشہ کے لیے ختم کردینا چاہیے۔

امریکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اسرائیل کے لیے اپنی مکمل حمایت کا یقین دلاتے ہوئے صدر منتخب ہونے کی صورت میں غزہ سے متعلق اپنی پالیسی پر کھل کر اظہار خیال کیا۔

جب صحافی نے سابق امریکی صدر پوچھا کہ کیا وہ اسرائیل کے کیمپ میں ہیں تو ڈونلڈ ٹرمپ نے برملا اثبات میں جواب دیتے ہوئے کہا کہ غزہ میں اسرائیل کی کارروائیوں کی حمایت کرتا ہوں۔

یہ خبر پڑھیں : غزہ میں تمام یرغمالیوں کی رہائی کے بدلے 6 ہفتوں کی جنگ بندی کی امریکی تجویز

ڈونلڈ ٹرمپ نے حماس کا نام لیے بغیر کہا کہ اسرائیل کو غزہ میں مسئلے کو ہمیشہ کے لیے ختم کرنا ہوگا۔ یہ عالمی امن اور بالخصوص مشرق وسطیٰ میں استحکام کے لیے ضروری ہے۔

سابق امریکی صدر کا یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب امریکا پر غزہ میں مسلسل ہلاکتوں پر بین الاقوامی دباؤ بڑھتا جا رہا ہے جب کہ امریکی صدر جوبائیڈن کو اپنی انتخابی مہم کے دوران بھی تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں : نکی ہیلی صدارت کی دوڑ سے دستبردار، ٹرمپ کی بائیڈن سے مقابلے کی راہ ہموار

جس پر امریکا کی نائب صدر کملا ہیرس نے صدر جوبائیڈن کو مشورہ دیا ہے کہ فلسطینیوں سے اظہار ہمدردی کرتے ہوئے فوری جنگ بندی پر کام کریں اور اسرائیل نواز پالیسی سے پیچھے ہٹیں ورنہ یہ سیاسی نقصان کا باعث بن سکتی ہیں۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔