کینیڈا میں سری لنکن ماں اور 4 کم سن بچوں سمیت 6 افرد کا بہیمانہ قتل؛ 1 زخمی

ویب ڈیسک  جمعـء 8 مارچ 2024
کینیڈا میں سری لنکن خاندان کے بہیمانہ قتل میں ان کے گھر مقیم 19 سالہ سری لنکن طالب علم ملوث ہے، پولیس (فوٹو: فیس بک)

کینیڈا میں سری لنکن خاندان کے بہیمانہ قتل میں ان کے گھر مقیم 19 سالہ سری لنکن طالب علم ملوث ہے، پولیس (فوٹو: فیس بک)

اوٹاوا: کینیڈا کے دارالحکومت میں سری لنکن باشندوں کے گھر میں ایک ہی خاندان کے 6 افراد کو تیز دھار ہتھیار کے ساتھ بیدردی سے قتل کردیا گیا جن میں 2 ماہ کے نومولود سمیت 4 بچے شامل ہیں۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اوٹاوا پولیس کو ایک ہنگامی مدد کی کال موصول ہوئی تھی۔ پولیس جائے وقوعہ پر پہنچی تو 7 افراد خون میں لت پت پڑے تھے جو آخری سانسیں لے رہے تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ 7 میں سے 6 افراد نے اسپتال جاتے ہوئے راستے میں ہی دم توڑ دیا جن میں 35 سالہ ماں اور اُن کے 2 ماہ کے نومولود سمیت 11، 4 اور 2 سالہ بچے شامل ہیں۔

پولیس نے مزید بتایا کہ ایک 40 سالہ شخص نے بھی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ دیا جو اس خاندان کا رشتہ دار تھا جب کہ والد کی حالت اب بہتر ہے اور ان کی نشاندہی پر ایک 19 سالہ طالب علم کو گرفتار کیا گیا۔

مبینہ قاتل کا تعلق بھی سری لنکا سے ہے جو تعلیم حاصل کرنے آیا ہے اور اس خاندان کا واقف کار ہونے کی وجہ سے انھی کے ساتھ رہ رہا تھا۔ قتل کا محرک جاننے کے لیے تفتیش جاری ہے۔

قتل کی اس ہولناک واردات نے کینیڈا کے شہریوں کو خوف زدہ اور پریشان کرکے رکھ دیا۔ ایسے واقعات وہاں نہ ہونے کے برابر ہیں۔ 10 لاکھ کی آبادی والے اوٹاوا میں گزشتہ برس مختلف واقعات میں 14 افراد قتل ہوئے تھے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔